عراقی فوج موصل کے جنوب مشرق میں واقع ایک اور پل پر قابض ہو گئی ہے۔ موصل کی فوجی مہم کے کمانڈر جنرل عبدالامیر راشد یار اللہ نے بتایا کہ یونیورسٹی کی کئی عمارتوں اور فریڈم برج کو آزاد کرا لیا گیا ہے۔

داعش یونیورسٹی کی عمارت کو ایک مرکز کے طور پر استعمال کرتی تھی۔ اس طرح موصل شہر سے گزرتے دریائے دجلہ پر کُل پانچ پلوں میں دو کو بازیاب کر ا لیا گیا ہے۔ عراقی فوجیوں نے یونیورسٹی پر دھاوا بولا اور عسکریت پسندوں کو پسپا ہونے پر مجبور کر دیا۔

عراقی فوج گزشتہ برس سترہ اکتوبر سے موصل کو ’اسلامک اسٹیٹ‘ سے آزاد کرانے کی کارروائی کر رہی ہے۔ یہ تنظیم 2014ء کے وسط سے اس شہر پر قابض ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY