صومالی پولیس کا کہنا ہے کہ دارالحکومت موغادیشو کے ایک ہوٹل پر مسلح افراد نے حملہ کیا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ خودکش کار بم دھماکے کے بعد مسلح افراد ہوٹل میں داخل ہونے میں کامیاب ہو گئے۔

ایک عہدیدار کیپٹن محمد حسین نے بدھ کو بتایا کہ موغادیشو کے ’دایا‘ ہوٹل میں صبح کے وقت جب حملہ ہوا تو اطلاعات کے مطابق درجنوں افراد بشمول قانون ساز بھی وہاں موجود تھے۔

اُنھوں نے کہا کہ ہوٹل کے اندر سے فائرنگ کی آوازیں سنائی دے رہی ہیں، لیکن فوری طور پر جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی۔

کسی نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے، تاہم شدت پسند تنظیم الشباب ماضی میں ایسے حملوں کی ذمہ داری قبول کرتی رہی ہے۔

اگرچہ اس تنظیم کے کئی مضبوط گڑھ ختم کیے جا چکے ہیں، لیکن اب بھی الشباب ملک کے مختلف حصوں خاص طور پر جنوبی اور وسطی صومالیہ میں مہلک حملے کرتی رہی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY