پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر انضمام الحق کا کہنا ہے کہ وہ کسی کا نام نہیں لیتے مگر ٹیم میں بڑی تبدیلیاں ہونی چاہئیں۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو میں انضام الحق کہتے ہیں کہ سیریز کے دوران کپتان کی تبدیلی سے متعلق نہ کوئی مشورہ دیا نہ بیان دیا ، لیکن وہ سمجھتے ہیں کہ اب تبدیلی کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ کوچ اور کپتان کی بات سنتے ہیں، دورۂ آسٹریلیا کے لیے جو ٹیم مانگی گئی وہ دے دی، نئے کھلاڑی پی ایس ایل سے ملیں گے۔

انضمام الحق نے ون ڈے اسکواڈ میں پروفیسر کی شمولیت کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ حفیظ گزشتہ سال ون ڈے کے بہترین کھلاڑی تھے، انہیں بغیر سوچے سمجھے نہیں بھیجا،وہ ٹیم منتخب کرتے ہوئے کوچ اور کپتان کی بھی سنتے ہیں۔

قومی سلیکشن کمیٹی کے سربراہ انضمام الحق یہ بھی کہتے ہیں کہ تینوں فارمیٹ کے لیے ایک ہی کپتان ہونا چاہیے، مصباح الحق سمجھدار کھلاڑی ہیں انہیں مستقبل کا فیصلہ خود کرنا ہے جس کے وہ منتظر ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY