رائم اور اسٹریٹ کرائم سے تنگ صوبائی دارالحکومت کے شہریوں نے قانون کو اپنے ہاتھ میں لے لیا، مشتعل افراد نے ایک ڈاکو کو تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد زندہ جلاکر ہلاک کر دیا جب کہ ایک ڈاکو کو فائرنگ کرکے بھی قتل کیا گیا۔

ڈان نیوز کی رپورٹ کے مطابق کراچی کے علاقے لانڈھی نمبر 3 میں مختلف دکانوں سے لوٹ مارکرنے والے ڈاکوؤں نے جب دودھ کی دکان کو لوٹنے کی کوشش کی تو دکان مالک نے مزاحمت کی، جس پر ڈاکوؤں نے فائرنگ کردی۔

فائرنگ کی آواز سن کر علاقہ مکین دکان پر پہنچ گئے اور ایک ڈاکو کو پکڑ کر تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد اس پر پیٹرول چھڑک کر جلاڈالا۔

پولیس کے مطابق ہلاک کیے گئے ملزم کا اسلحہ، 3 موبائل فونز اور موٹرسائیکل تحویل میں لے لیں۔

دوسرا واقعہ کورنگی کے علاقہ اللہ والا ٹاؤن میں پیش آیا، جہاں ڈاکو ایک کار سوار کو لوٹنے کی کوشش کر رہے تھے کہ علاقہ مکینوں نے ڈاکوؤں پر فائرنگ کردی، جس وجہ سے ایک ڈاکو موقع پر ہی ہلاک ہوگیا۔

علاقہ مکینوں کی فائرنگ سے ہلاک ہونے والے ڈاکو کا ایک مرد اور ایک خاتون ساتھی بھی زخمی ہوئے، جنہیں بعد ازاں جناح ہسپتال منتقل کیا گیا۔

دوسری جانب قائد آباد کی گلستان سوسائٹی میں بھی فائرنگ کا واقعہ پیش آیا، جس میں مزمل حسین نامی شخص زخمی ہوگیا، جسے جناح ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

پولیس کے مطابق کورنگی کے علاقے ابراہیم حیدری سے 22 سالہ نامعلوم شخص کی لاش ملی ہے۔

خیال رہے کہ کراچی میں گزشتہ 4 سال سے جاری آپریشن کے باعث پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے شہر میں جرائم کم ہونے کا دعویٰ کیا تھا، تاہم گزشتہ چند ماہ سے شہر میں اسٹریٹ کرائمز اور دیگر جرائم کے واقعات میں اضافہ دیکھا گیا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY