سندھ ہائیکورٹ نے کرپشن کے دو ریفرنس میں ڈاکٹر عاصم حسین کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا حکم دیا ہے۔

ڈاکٹر عاصم کیخلاف 479 ارب روپے کرپشن کے دو ریفرنسز میں درخواست ضمانت پر سندھ ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی۔ دو رکنی بینچ میں جسٹس فاروق شاہ اور جسٹس کے کے آغا شامل تھے۔

سندھ ہائیکورٹ نے درخواست ضمانت پرتحریری فیصلہ جاری کر دیا ۔ فیصلے میں ڈاکٹر عاصم کااصلی پاسپورٹ عدالت میں جمع کرانے کا حکم دیتے ہوئے وزارت داخلہ کو ہدایت جاری کی ہیں کہ انہیں نیا یا ڈپلیکیٹ پاسپورٹ بھی جاری نہ کیا جائے۔

اس سے قبل سندھ ہائیکورٹ کے دونوں ججوں کی رائے میں اختلاف سامنے آگیا تھا۔کراچی بینچ کے سربراہ جسٹس فاروق شاہ نے ضمانت کی درخواست مسترد کی جس پرریفری جج مقرر کرنے کیلئے معاملہ چیف جسٹس کوبھیجا گیا۔

بینچ میں شامل جسٹس فاروق شاہ نے فیصلہ سنایا کہ ڈاکٹر عاصم کو مطلوبہ علاج کی سہولت مل رہی ہیں، فی الحال انہیں ضمانت نہیں دی جاسکتی جبکہ جسٹس کے کے آغا نے 25 ،25لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض ضمانت منظور کی ضمانت منظور کی

SHARE

LEAVE A REPLY