امریکا نے 7 ملکوں کیخلاف سفری پابندی معطل کردی

0
107

امریکی صدر ٹرمپ کو بڑا جھٹکالگا ہے، امریکی عدالت کے حکم کے بعد امریکی حکومت نے سات ملکوں کےخلاف سفری پابندی معطل کردی۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان کے مطابق امریکی عدالت کے فیصلے کے بعد سفری پابندیاں معطل کی گئیں،جبکہ 7 مسلم ممالک کے شہریوں کے ویزوں کی منسوخی واپس لے لی گئی۔

امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق ٹرمپ کے حکم نامے کے بعد 60 ہزارافراد کے ویزے منسوخ کیے گئے تھے،اگران لوگوں کے ویزوں کی تاریخ باقی ہو تو وہ اب امریکا آسکتے ہیں۔

اس سے قبل ریاست واشنگٹن کی عدالت نے ٹرمپ انتظامیہ کے خلاف فیصلہ سنا یا تھا کہ سات مسلم ملکوں کے شہریوں کو امریکا آنے سے روکنے کا حکم نامہ معطل رکھا جائے،اس فیصلے کا اطلاق امریکا بھر میں ہو گا۔

عدالتی فیصلے کے نتیجے میں ائرلائنز کو پابندی زدہ ممالک سے مسافر لانے کی اجازت مل گئی ،جبکہ امریکا اور برطانیہ سمیت میں مختلف ممالک میں ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مظاہروں کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔

فیڈرل جج جیمز رابرٹ نے ٹرمپ کے فیصلے کو معطل کر دیا تھا،امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سات مسلم ملکوں پر سفری پابندیاں ہٹانے کے امریکی جج کے فیصلے کو مضحکہ خیز قرار دے دیا۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فیڈرل جج کے لیے جو الفاظ استعمال کیے وہ تاریخ میں شاید ہی کسی امریکی صدر نے کسی جج کے لیے استعمال کیے ہوں، ٹرمپ نے جیمز رابرٹ کو ’نام نہاد جج‘ قرار دیا اور ان کے فیصلے کو ’مضحکہ خیز رائے‘ قرار دیا۔

ٹرمپ نے کہا کہ اس نام نہاد جج کی مضحکہ خیز رائے سے قیام امن کی ذمہ داری امریکا کے ہاتھوں سے نکل جائے گی، جج کے اس فیصلے کے خلاف فیصلہ آئے گا۔

SHARE

LEAVE A REPLY