اسلام آباد میں تھانہ سبزی منڈی کے علاقے میں فائرنگ کرکے نوجوان کو ہلاک کرنے والے پولیس کانسٹیبل نے خود ہی گرفتاری دے دی۔

پولیس حکام کے مطابق پولیس کے ایگل اسکواڈ کا ہلکار سمیع اللہ نیازی ایس فائرنگ کے بعد موقع سے فرار ہوگیا تھا جس کے بعد پولیس نے اس کی تلاش شروع کی تھی۔

تاہم واقعے کے دو روز بعد ملزم نے خود کو پولیس کے حوالے کردیا اور ایس پی ساجد کیانی کے سامنے پیش ہوگیا۔

حکام نے تصدیق کی ہے کہ ملزم پولیس اہلکار کو پیر 6 فروری کو مقامی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔
واضح رہے کہ 3 فروری کو اسلام آباد میں تھانہ سبزی منڈی کے علاقے میں ایک پولیس اہلکار کی فائرنگ سے نوجوان ہلاک ہوگیا تھا جبکہ فائرنگ کرنے والا اہلکار اپنے ساتھی سمیت موقع سے فرار ہوگیا تھا۔

واقعہ اسلام آباد کے سیکٹر آئی ٹین ون کے قریب پیش آیا تھا جہاں ایگل اسکواڈ کے اہلکار نے ناکے پر ایک گاڑی کو رکنے کا اشارہ کیا اور نہ رکنے پر فائرنگ کردی تھی۔

فائرنگ کے نتیجے میں کار سوار نوجوان تیمور ریاض ہلاک ہوگیا تھا جبکہ گاڑی میں موجود لڑکی محفوظ رہی تھی۔

فائرنگ کرنے والے پولیس اہلکار کے خلاف تھانہ سبزی منڈی میں مقتول کے بھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

ایف آئی آر کے مطابق اہلکار سمیع اللہ نیازی نے گاڑی پر عقب سے تین فائر کیے، جن میں سے ایک گولی نوجوان تیمور کے سر میں عقب سے لگی اور اس کی موقع پر ہی موت واقع ہوگئی۔

واقعے کے بعد نوجوان کے ورثاء نے آئی جے پی روڈ پر احتجاج بھی کیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY