سیہون شریف میں لعل شہباز قلندر کے مزار پر خودکش حملے کے بعد لاہور، کراچی اور ملتان سمیت کئ شہروں میں سیکورٹی سخت اور پولیس کو الرٹ کردیا گیا ہے۔
لاہور میں شہر کے داخلی و خارجی مقامات پر سخت چیکنگ کے احکامات جاری کیے گئے ہیں جبکہ داتا دربار،بی بی پاک دامن دربار،شاہ جمال اور میاں میر سمیت دیگر درباروں کی سکیورٹی بڑھانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ جس کے بعد درباروں میں داخل ہونے والوں کی سخت چیکنگ کی جا رہی ہے۔
دوسری جانب شہر کے مختلف مقامات پر پولیس نے سرچ آپریشن بھی شروع کردیا ہے ریلوے اسٹیشن کے قریب لنڈا بازار میں مشکوک افراد کے خلاف سرچ آپریشن کے دوران بارہ مشکوک افراد کو نامکمل کوائف پر حراست میں لیکر تفتیش شروع کردی ہے جبکہ پولیس کا کہنا ہے کہ شہریوں کے کوائف کی تصدیق بایئو میٹرک ڈیوائس کے ذریعے کی جارہی ہے۔
کراچی میں بھی سیکورٹی سخت کردی گئی ہے اور عبداللہ شاہ غازی سمیت دیگر مزارات کے گرد پولیس کی نفری میں اضافہ کردیا گیا ہے۔
ملتان میں درگاہوں کو خالی کرالیا گیا ہے، درگاہ شاہ شمس، حضرت بہاالدین زکریا اور حضرت شاہ رکن عالم کو زائیرن کے لیے بند کر دیا گیا جبکہ سیکیورٹی کے لیے پولیس کی بھاری نفری تعینات کر دی گئی. سی پی او ملتان نے تمام ایس ایچ اوز اور ڈی ایس پیز کو ہدات جاری کر دی کہ وہ اپنے علاقے میں مزارات اور امام بارگاہوں کی خود نگرانی کریں اور سیکیورٹی کو یقینی بنائیں

SHARE

LEAVE A REPLY