ویسٹ انڈیز کے عظیم کرکٹر اور کوئٹہ گلیڈی ایڈیٹرسے منسلک سر ویوین رچرڈز کا کہنا ہے کہ انتظامات کو دیکھتے ہوئے انھیں پاکستان آنے میں کوئی مسئلہ نہیں اور ٹیم کی فائنل تک رسائی خوش کن ہوگی۔

کرکٹ ویب سائٹ پاک پیش کو دیے گئے ایک انٹرویو میں ویوین رچرڈز نے کہا کہ میں ماضی میں پاکستان کے دورے میں مختلف شہروں میں جاتا رہا ہوں۔

ویوین رچرڈز کا کہنا تھا کہ ‘مجھے چند شہروں کے نام یاد ہیں جن میں فیصل آباد، ملتان، کراچی اور پشاور شامل ہیں’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘یہ یاد رہے کہ ان دنوں جب روس نے افغانستان میں مداخلت کی تھی اور ہم پشاور میں کھیل رہے تھے تو سرحد کے قریب ہونے والی بمباری کی لرزش سن سکتے تھے’۔

عظیم کھلاڑی نے کہا کہ میرے لیے بڑی عزت کی بات ہے کہ عمران خان، مرحوم وسیم راجا، جاوید میانداد اور اسکواش کے کھلاڑی جہانگیر خان جیسے عظیم دوستوں کا تعلق اس ملک سے ہے اور مجھے ان کی بڑی عزت ہے’۔

پاکستان سپر لیگ کے دوسرے سیزن کے شروع ہوتے ہی اسپاٹ فکسنگ کے اسکینڈل نے مداحوں میں غیر یقینی کی کیفیت پیدا کی تاہم حکام کی جانب سے فوری طورپر کارروائی عمل میں لائی گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘میں سمجھتا ہوں کہ ‘پی ایس ایل واپس اپنی ڈگر پر آگئی ہے جس طرح زندگی میں دیگر چیزیں ہوتی ہی، اونچ نیچ اور چھوٹے مسائل ہوتے ہیں’۔

انھوں نے کہا کہ ‘اچھی خبر یہ ہے کہ اس ٹورنامنٹ کے سربراہان کی جانب سے شروع میں ہی ایسے فیصلوں کئے گئے جس نے شبہات کو دور کردیا ہے اور میں ان فیصلوں کے نتائج سے بہت خوش ہوں’۔

SHARE

LEAVE A REPLY