اسرائیلی فوج کے رات کو چھاپے، گھروں میں سوئے20 فلسطینی اٹھا لیے

0
119

مرکزاطلاعات فلسطین
قابض صہیونی فورسز نے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے مختلف شہروں میں گھر گھر تلاشی کی کارروائیوں کے دوران گھروں میں سوئے 20 فلسطینیوں کو اٹھا کر حراستی مراکز منتقل کردیا ہے۔ تلاشی کی کارروائیوں کی آڑ میں قابض صہیونی فوج نے گھروں میں گھس کر لوٹ مار کی اور قیمتی سامان، نقدی اور طلائی زیورات لوٹ لیے۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق قابض فورسز نے غرب اردن کے جنوبی شہر الخلیل میں بیت عوا کے مقام پر تلاشی کے دوران تین فلسطینیوں کو ان کے گھروں سے اٹھا لیا۔

مرکز کے نامہ نگار نے بتایا کہ اسرائیلی فوج کی آٹھ جیپوں نےمقامی وقت کے مطابق رات ایک بجے بیت عوا میں چھاپہ مارا اور گھروں میں سوئے تین فلسطینیوں عمر مسالمہ، غازی فاروق اور عالی عارف سویطی کو ہتھکڑیاں لگا کر انہیں کسی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

جنوبی الخلیل شہر میں اسرائیلی فوج نے متعدد گھروں پر چھاپے مارے۔ الظاھریہ قصبے میں شہید فلسطینی سعد قیسیہ کے گھر پر چھاپے کے علاوہ اطراف میں بھی گھر گھر تلاشی کے دوران توڑپھوڑ کی گئی۔

خیال رہے کہ سعد قیسیہ کو کل اسرائیلی فوج نے ایک یہودی آباد کار پر چاقو کےحملے کے الزام میں گولیاں مار کر شہید کردیا تھا۔

اسرائیلی فوج نے الخلل میں رمانہ اور زبوبہ قصبوں میں شہریوں کے گھروں پر آنسوگیس کے گولے بھی برسائے۔

ادھر نابلس میں جمعرات کو علی الصباح اسرائیلی فوج نے بیتا اور عورتا قصبوں میں تلاشی کے دوران پانچ فلسطینی شہریوں کو حراست میں لے لیا۔ ان کی شناخت سامرشراب، عبدالسلام عواد، علی لولح، محمد قواریق اور محمد اسعید کے نام سے کی گئی ہے۔ پانچ شہری ماضی میں بھی اسرائیلی جیلوں میں پابند سلاسل رہ چکے ہیں۔

ادھر اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری کرد بیان میں کہا گیا ہے کہ رات گئے تلاشی کی کارروائیوں میں 20 فلسطینیوں کو حراست میں لیا گیا ہے۔ ان میں بعض شہری اسرائیلی فوج اور سیکیورٹی اداروں کو یہودی آباد کاروں کے خلاف مزاحمتی سرگرمیوں میں مطلوب تھے۔

مقامی فلسطینی شہریوں کا کہنا ہے کہ تازہ گرفتایوں میں ایک 12 سالہ بچے ھمام راضی کو بھی حراست میں لیا گیا ہے۔ ادھر بیت المقدس میں کفر عقب اور حزما کے مقامات پر تلاشی کی کاروائیوں کےدوران اسرائلی فوج نے گھروں میں گھس کر سوئے ہوئےشہریوں کو زدو کوب کیا۔ خواتین اور بچوں کو ہراساں کرنے کے ساتھ گھروں میں موجود سامان کی توڑپھوڑ کی اور نقد اور زیورات لوٹ لیے۔
مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق قابض فورسز نے غرب اردن کے جنوبی شہر الخلیل میں بیت عوا کے مقام پر تلاشی کے دوران تین فلسطینیوں کو ان کے گھروں سے اٹھا لیا۔

مرکز کے نامہ نگار نے بتایا کہ اسرائیلی فوج کی آٹھ جیپوں نےمقامی وقت کے مطابق رات ایک بجے بیت عوا میں چھاپہ مارا اور گھروں میں سوئے تین فلسطینیوں عمر مسالمہ، غازی فاروق اور عالی عارف سویطی کو ہتھکڑیاں لگا کر انہیں کسی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

جنوبی الخلیل شہر میں اسرائیلی فوج نے متعدد گھروں پر چھاپے مارے۔ الظاھریہ قصبے میں شہید فلسطینی سعد قیسیہ کے گھر پر چھاپے کے علاوہ اطراف میں بھی گھر گھر تلاشی کے دوران توڑپھوڑ کی گئی۔

خیال رہے کہ سعد قیسیہ کو کل اسرائیلی فوج نے ایک یہودی آباد کار پر چاقو کےحملے کے الزام میں گولیاں مار کر شہید کردیا تھا۔

اسرائیلی فوج نے الخلل میں رمانہ اور زبوبہ قصبوں میں شہریوں کے گھروں پر آنسوگیس کے گولے بھی برسائے۔

ادھر نابلس میں جمعرات کو علی الصباح اسرائیلی فوج نے بیتا اور عورتا قصبوں میں تلاشی کے دوران پانچ فلسطینی شہریوں کو حراست میں لے لیا۔ ان کی شناخت سامرشراب، عبدالسلام عواد، علی لولح، محمد قواریق اور محمد اسعید کے نام سے کی گئی ہے۔ پانچ شہری ماضی میں بھی اسرائیلی جیلوں میں پابند سلاسل رہ چکے ہیں۔

ادھر اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری کرد بیان میں کہا گیا ہے کہ رات گئے تلاشی کی کارروائیوں میں 20 فلسطینیوں کو حراست میں لیا گیا ہے۔ ان میں بعض شہری اسرائیلی فوج اور سیکیورٹی اداروں کو یہودی آباد کاروں کے خلاف مزاحمتی سرگرمیوں میں مطلوب تھے۔

مقامی فلسطینی شہریوں کا کہنا ہے کہ تازہ گرفتایوں میں ایک 12 سالہ بچے ھمام راضی کو بھی حراست میں لیا گیا ہے۔ ادھر بیت المقدس میں کفر عقب اور حزما کے مقامات پر تلاشی کی کاروائیوں کےدوران اسرائلی فوج نے گھروں میں گھس کر سوئے ہوئےشہریوں کو زدو کوب کیا۔ خواتین اور بچوں کو ہراساں کرنے کے ساتھ گھروں میں موجود سامان کی توڑپھوڑ کی اور نقد اور زیورات لوٹ لیے۔

SHARE

LEAVE A REPLY