امریکی محکمہ دفاع پینٹا گون نے بتایا ہے کہ سنہ 2009ء میں کیوبا کی جزیرہ گوانتا نامو جیل سے رہا ہونے والے ایک سینیر القاعدہ کمانڈر سمیت تنظیم کے متعدد جنگجو یمن میں امریکا کے تازہ فضائی حملے میں ہلاک ہوگئے ہیں۔

امریکی محکمہ دفاع کے ترجمان جیف ڈیوس نے ایک بیان میں کہا کہ یمن میں حالیہ ڈورن حملے کے نتیجے میں سنہ 2002ء سے 2009ء تک گوانتا نامو جیل میں قید رہنے والا جنگجو یاسر السلمی ہلاک ہوگیا ہے۔
تاہم انہوں نے السلمی کے بارے میں مزید معلومات فراہم نہیں کیں۔ ترجمان کا کہنا ہے کہ یاسر السلمی کا القاعدہ کے ساتھ تعلق ضرور تھا مگر اس کا شمار القاعدہ کی چوٹی کی قیادت میں نہیں ہوتا تھا۔

خیال رہے کہ گذشتہ جمعرات کے بعد امریکی فوجی فوج نے یمن میں القاعدہ کے ٹھکانوں پر 40 فضائی حملے کیے ہیں۔ جزیرہ گوانتا نامو میں اب بھی 41 مشتبہ شدت پسند قید ہیں جن میں 10 کے خلاف عدالتوں میں مقدمات چلائے جارہے ہیں

SHARE

LEAVE A REPLY