یونان کی پاکستانی برادری کے صدر چوہدری شاہد نواز وڑائچ منتخب

0
117

ایتھنز(سکندرریاض چوہان)یونان کی پاکستانی برادری نے متفقہ طورپراگلے تین سال کے لیے اپنے سالار چوہدری شاہد نواز وڑائچ کو چن لیا بھاری اکثریت سے کامیاب۔گزشتہ روز یونان میں ہونے والے پاکستانی برادری کے انتخابات جس میں یونان کی تمام سماجی،سیاسی،مذہبی،فلاحی،علاقائی اوردیگر تنظیمات شامل تھی نے اس الیکشن میں حصہ لیا پاکستانیوں کی رائے جاننے کے لیے ایتھنز اور اس کے گردونواح کے علاوہ یونان بھر میں پنتیس مقامات پرپولنگ کرائی گئی جس میں لوگوں نے بے انتہا جوش وخروش کا مظاہرہ کیااور چوہدری شاہد نواز وڑائچ کے حق میں فیصلہ دیااس مرتبہ انتخابات کے نتائج کافی دیر کے بعد کیے گے کیونکہ یونان کے دور دراز علاقہ جات سے ووٹوں کے بکس علی الصبح وصول ہوئے جس کے بعد گنتی کا عمل شروع کیا گیا ۔الیکشن کمیٹی جس کے چئیرمین جاوید اقبال اعوان نے اپنے دیگر ساتھیوں حافظ محمد اکرم،ندیم بٹ ،احسان اللہ خان،چوہدری مدثر خادم سوہل کے ہمراہ نتائج کے اعلان کرتے ہوئے کہاکہ سپریم جونسل میں تمام مذہبی،سماجی ،سیاسی ،علاقائی اور فلاحی تنظیموں کے افراد موجود تھے جنھوں نے ناصرف الیکشن کے انعقاد میں اہم کردار ادا کیا بلکہ شفافیت پر کڑی نگاہ رکھی اور کسی بھی ووٹ کے حوالے سےتمام اندارج کے مطابق ثبوت پیش کیاجاسکتاہے۔انھوں نے کہاکہ پنتیس مقامات پر انتخابی عمل ہوا جس میں قریبا دس ہزار ووٹ ملے یوں نتیجے کے مطابق چوہدری شاہد نواز وڑائچ بھاری اکثریت سے جیت گے اور ساڑھے نو ہزار ووٹروں نے چوہری شاہد نواز وڑائچ پر بھرپور اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ان کو اپنا صدر منتخب کرلیا،الیکشن میں ایک آڈٹ کمیٹی بھی چنی گئی جو تین سال تک حسابات پر نظر رکھے گی۔مزید برآں ایک اور الیکشن جس میں ساڑھے پانچ ہزار کے قریب دوسرے مخالف امیدوار جاوید ارائیں جس کے الگ سے الیکشن ہوئے کو لوگوں نے ووٹ دیے یوں اگر نتیجہ کو دیکھا جائے تو جاوید ارائیں ساڑھے چارہزر ووٹوں سے شکست کھا گے اور چوہدری شاہد نواز وڑائچ کو تین سال کے لیے اپنا سربراہ منتخب کرلیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پاکستانی برادری نے جو ذمہ داری ڈالی ہے اس کو نبھانے کی ہرممکن کوشش کروں گا۔چوہدری شاہدنواز وڑائچ

ایتھنز(سکندرریاض چوہان)پاکستانی برادری کے نومنتخب متفقہ صدر چوہدری شاہد نواز وڑائچ نے الیکشن میں کامیابی کے بعد اپنے بیان میں کہاہے کہ وہ اللہ عالی کا شکر اداکرتے ہیں جس نے اس کو اس عزت کے قابل جانا اورتمام پاکستانی برادری کا تہہ دل سے ممنون ہوں جنھوں نے ان کے کاندھے پر یہ ذمہ داری ڈالی ہے۔انھوں نے الیکشن کے کامیاب انعقاد کے لیےسنی تحریک،بزم مہریہ نصریہ، ضیالامت فاونڈیشن، جعفریہ آرگنائزیشن، عزاخانہ گلزار زینب،انجمن محبان طریقت،دعوت اسلامی،منہاج القرآن،پاکستان مسلم لیگ(ن)،پاکستان تحریک انصاف،پاکستان مسلم لیگ(ق)،پاکسان پیپلز پارٹی،جرنلسٹس کلب،اسلامک فورم یونان،مرکزی جمعیت الحدیث،اعوان سوسائٹی،بڑیلہ شریف سوسائٹی،آسپروپیرگوس سوسائٹی،پاک کشمیر ویلفئیر سوسائٹی،آل پاکستان کمیونٹی یونان،پاکستانی تاجربرادری،پاکستان کمیونٹی یونان،بینکہ چیمہ ایسوسی ایشن،چوہدری سرور گروپ،چوہدری مدثر وڑائچ گروپ اور دیگر جماعتوں کا شکریہ اداکیاجنھوں نے انتخابات کے کامیاب انعقاد پر ان سے تعاون کیا ۔انھوں نے اپنے بیان میں کہاکہ پاکستانی برادری نے جو ذمہ داری ان کے کندھے پر ڈالی ہے اور تمام پاکستانی برادری نے جو متفقہ فیصلہ کیاہے میں انشااللہ ان کے مشورہ جات کی روشنی میں اپنی ٹیم کے ہمراہ پاکستانی برادری کی خدمت میں کوئی کسر اٹھانہ رکھوں گا انھوں نے کہاکہ ہمارا مشن ہے ہم انشااللہ یونان میں ایک ناعاقبت اندیش کی جانب سے پاکستانیوں کے کھوئے وقار کو بحال کریں گے،یونانی اداروں کے ساتھ اچھے تعلقات کو فروغ دے کر پاکستانیوں کے مسائل کو حل کرنے کی کوشش کریں گے،ایک نا م نہادشخص نےفقط اپنے ذاتی مفاد کی خاطر یونان میں پاکستانی برادری کو یونانی عوام اور یونانی اداروں کی نظروں میں گرایاہم ان انشااللہ باوقاراندازمیں اپنے ملک وقوم کا وقار بلند کریں گے،الیکشن میں بھی پاکستانی بھائیوں کو نظر آگیاکہ وہ دم دباکر بھاگ گیا اور اپنے ایک حواری مولوی کے ساتھ مل کر پاکستانی برادری میں انتشار پیداکرنے کی کوشش کی اسی نے پاکستانیوں کو پاکستانیوں سے لڑانے کی مذموم کوشش کی جس کو آج عوام نے مسترد کردیا اوریہ ثابت کردیاکہ ان کے اتحاد نے ان کو گھر بھیج دیاہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY