عراقی جنگ میں مارے گئے پاکستانی نژاد امریکی فوجی کے والد خضر خان پر سفری پابندی لگنے کا خدشہ ہے۔ ٹرمپ انتظامیہ نے ان کی سفری آزادی کا دوبارہ جائزہ لینے کا اعلان کردیا ۔

خضر خان نے اپنے ایک بیان میں بتایا کہ انہیں نوٹس موصول ہوا ہے جس میں انہیں بتایا گیا کہ ان کے امریکا میں سفر کرنے کے حق میں دوبارہ جائزہ لیا جارہا ہے ۔ جس کے بعد انہوں نے کینیڈا میں ایک تقریب میں شرکت کا پروگرام منسوخ کردیا ہے ۔

خضر خان کا کہنا تھا کہ انہیں اس حوالے سے کوئی وجہ بیان نہیں کی گئی کہ کیوں ان کی سفری حقوق کا دوبارہ جائزہ لیا جارہا ہے ۔ ٹرمپ انتظامیہ کا یہ اقدام نہ صرف ان کے لیے بلکہ ان تمام امریکیوں کے لیے تشویش کا باعث ہے کہ جو دنیا بھر میں آزادانہ سفر کا حق رکھتے ہیں ۔

دوسری جانب امریکی محکمہ کسٹمز نے اس حوالے سے کوئی تفصیلات جاری نہیں کیں

SHARE

LEAVE A REPLY