ترکی کی ایک عدالت نے منگل کے روز اصلی ایردوآن کے بیرون ملک سفر پر عائد پابندی برقرار رکھنے کا حکم دے دیا۔ ماہر طبیعیات اصلی ایردوآن ایک بہت مشہور ناول نگار بھی ہیں، جو ترکی میں کرد نسلی اقلیت کی بڑی حامی سمجھی جاتی ہیں۔ انہیں اپنے خلاف ’دہشت گردی کے پراپیگنڈے‘ سے متعلق الزامات کا سامنا ہے۔

انہیں گزشتہ دسمبر میں جیل سے رہا کر دیا گیا تھا تاہم ان کے خلاف مقدمے کی کارروائی ابھی تک جاری ہے۔ انہوں نے عدالت سے درخواست کی تھی کہ انہیں عارضی طور پر ترکی سے باہر جانے کی اجازت دی جائے۔ انچاس سالہ خاتون مصنفہ اصلی ایردوآن کی یہ درخواست مسترد کرتے ہوئے عدالت نے مقدمے کی سماعت بائیس جون تک کے لیے ملتوی کر دی۔

اصلی ایردوآن کو، جن کا ترک صدر ایردوآن سے کوئی تعلق نہیں ہے، اس مقدمے میں عمر قید تک کی سزا ہو سکتی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY