وھی زمانہ’ وھی کربلا’ وھی ھم ھیں’سیدفارغ بخاری

0
55

وھی زمانہ’ وھی کربلا’ وھی ھم ھیں’
وھی ھے شمر’ وھی پیاس کے تلاطم ھیں۔
~
وھی فرآت_ محبت پہ پہرے نفرت کے’
حسین ھی نہیں ورنہ یذید کیا کم ھیں۔
~
صلیب و دار کو لاتے نہیں ھیں خاطر میں’
ترے پیام کی چوکھٹ پہ جن کے سر خم ھیں۔
~
ترے دیوانے ھر اک رت میں سر کشیدہ رھے’
روایتوں کے پجاری اسیر_ موسم ھیں۔
~
لہو لہو میں صداقت کی منزلیں اب بھی’
وھی ھیں کوفی’ وھی نینواکے موسم بیں

( سیدفارغ بخاری)

SHARE

LEAVE A REPLY