سابق وزیراطلاعات سندھ پانچ ارب روپے کی کرپشن الزامات کے مقدمے میں حفاظتی ضمانت کرانے میں کامیاب ہوگئے ۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ میں سندھ کے سابق صوبائی وزیرشرجیل میمن کے خلاف پانچ ارب روپے کی کرپشن الزامات کے مقدمے کی سماعت ہوئی اس موقع پر ان کے وکیل نے حفاظتی ضمانت کی درخواست دائر کی جسے عدالت نے منظور کرتے شرجیل میمن کو پانچ اپریل تک حفاظتی ضمانت دے دی اور انہیں 20 لاکھ کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا اس کے ساتھ ساتھ عدالت نے سندھ کے سابق وزیراطلاعات کو ٹرائل کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت بھی جاری کی اس موقع پر نیب کے وکیل نے کہا ہے کہ احتساب عدالت شرجیل میمن کو مفرور قرار دے چکی ہے اب ایسی صورتحال میں یہ ضمانت غیرمعمولی ہو گی

حفاظتی ضمانت منظور ہونے کے بعد فاروق ایچ نائیک نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ پیپلز پارٹی کے متعلق ہمیشہ جھوٹے الزامات لگائے گئے اس موقع پر شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ مجھ پر عائد تمام کیسز کا سامنا کروں گا جب میں باہر گیا تو کوئی کیس نہ تھایہ ریفرنس میرے بیرون ملک جانے کےبعد بنایاگیا۔

SHARE

LEAVE A REPLY