بھارت کی شمالی ریاست تامل ناڈو میں سیاحت کے لیے آنے والی جرمن خاتون کےساتھ مبینہ طور اجتماعی زیادتی کا واقعہ پیش آیا۔

تفصیلات کےمطابق ریاست جرمن سیاح کاکہناہےکہ وہ ماماللاپورم کےایک ساحلی ہوٹل میں ٹھہری ہوئی تھیں اورساحل سمندرپرچہل قدمی کےدوران نامعلوم افراد انہیں زبردستی اپنے ساتھ لےگئے اورزیادتی کانشانہ بنایا۔

پولیس افسر سنتوش کاکہناہےکہ واقعے کی رپورٹ درج کرکے تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں اور مشتبہ افراد کی تلاش کے لیے بھی کارروائی کا آغاز کر دیاگیا ہے۔

ضلعی پولیس افسر کا کہناتھاکہ جرمن خاتون کا طبی معائنہ کروایا گیا ہےجس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ خاتون سے زیادتی کی گئی ہے۔

میڈیا رپورٹس کےمطابق یہ خاتون پانچ دیگرجرمن شہریوں کے ساتھ یہاں سیاحت کے لیے آئی ہوئی تھیں۔

خیال رہےکہ بھارت میں غیرملکی سیاح خواتین کےساتھ زیادتہ کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے۔ گزشتہ ماہ گوا میں ایک 28 سالہ آئرش خاتون کو زیادتی کےبعد قتل کردیاگیاتھا

SHARE

LEAVE A REPLY