صومالیہ میں نئے فوجی سربراہ پر کیے گئے ایک کار بم حملے کے نتیجے میں دس افراد مارے گئے ہیں۔ حکام نے بتایا ہے کہ اس حملے میں فوجی سربراہ محمد جامع محوظ رہے۔ جامع کچھ روز قبل ہی یس عہدے پر فائز ہوئے تھے۔

صومالیہ میں فعال شدت پسند تنظیم الشباب نے آج موغا دیشو میں کی گئی اس خونریز کارروائی کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ طبی ذرائع کے مطابق ہلاک شدگان میں ایک فوجی بھی شامل ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY