گڈ فرائیڈے’ حضرت عیسیٰ کو بیت المقدس میں مصلوب کیا گیا تھا

0
181

دنیا بھر میں عیسائی اپریل میں ایسٹر سے قبل کے جمعے کو ‘گڈ فرائیڈے’ مناتے ہیں اور اس دن کی مناسبت سے مختلف شہروں میں مذہبی تقریبات منعقد کی جاتی ہیں۔

عیسائی عقیدے کے مطابق ‘گڈ فرائیڈے’ وہ دن ہے جب حضرت عیسیٰ کو فلسطین کے شہر بیت المقدس میں مصلوب کیا گیا تھا۔

اس دن کے روایتی جلوس میں شرکت کے لیے ہزاروں عیسائی عقیدت مند جمعے کو بیت المقدس کے قدیم شہر میں جمع ہوئے۔

پتھر سے بنی شہر کی قدیم تنگ گلیوں سے گزرنے والے جلوس میں شریک بعض افراد نے اپنے کاندھوں پر لکڑی کی بڑی بڑی صلیبیں بھی اٹھا رکھی تھیں۔

good-friday2

عیسائی روایات میں ‘گڈ فرائیڈے’ کے اس جلوس کے روایتی راستوں کو ‘ویا ڈولوروسا’ یعنی ‘دکھوں کا راستہ’ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

روایات کے مطابق ‘گڈ فرائیڈے’ کا جلوس انہی راستوں سے گزرتا ہے جہاں سے دو ہزار سال قبل حضرت عیسیٰ صلیب کی جانب جاتے وقت گزرے تھے۔

‘گڈ فرائیڈے’ کے موقع بیت المقدس میں سخت حفاظتی انتظامات کیے گئے تھے اور جلوس کے راستوں پر خودکار ہتھیاروں سے مسلح اسرائیلی فوجی تعینات تھے۔

جلوس اپنے روایتی راستوں سے گزرتا ہوا ‘چرچ آف دی ہولی سیپلکر’ پر اختتام پذیر ہوا جہاں عیسائیوں کے عقیدے کے مطابق حضرت عیسیٰ کو مصلوب کیا گیا تھا۔

عیسائی روایات میں کہا گیا ہے کہ حضرت عیسیٰ مصلوب کیے جانے کے بعد اسی مقام پر دوبارہ جی اٹھے تھے جس کی یاد میں عقیدت مند یہاں ‘ایسٹر سنڈے’ کا تہوار مناتے ہیں

ایک اور تحقیق کے مطابق مقدس جمعہ (گڈ فرائیڈے) کو ہم ایسٹر کا جمعہ بھی کہتے ہیں . اس جمعہ کے دن یسوع المسیح کو صلیب دی گئی تھی اور اس مقدس جمعہ کے دن ہم یسوع المسیح کی صلیب پر موت کو یاد کرتے ہیں اور گرجا گھروں میں اپنی نجات اور یسوع المسیح کی صلیب پر موت کو یاد کر کے دکھ کرتے ہیں ، کیونکہ اس نے ہمارے گناہوں کی خاطر صلیب پر جان دی . لیکن انجیل ہمیں کبھی بھی اس دن کو یسوع المسیح کی موت کو یاد کرنے کے لیے مخصوص نہیں کرتی . انجیل نے ہمیں ان معاملات میں مکمل آزادی بخشی ہے

رومیوں ١٤باب ٥ آیت ” کوئی تو ایک دن کو دوسرے سے افضل جانتا ہے اور کوئی سب دنوں کو برابر جانتا ہے . ہر کوئی اپنے دل میں پورا اعتقاد رکھے

یسوع المسیح کی موت کو یاد کرنے کا کوئی مخصوص دن نہیں رکھا گیا . گرجا گھروں میں شکر گزاری کی دعا کر کے ، خدا کی موت اور خدا کی صلیب پر جان دینے والے منظر کو یاد کر کے ، خدا کی ثنا گا کر اور خدا کی صلیبی موت پر پیغام دے کراس مقدس جمعہ کو منایا جاتا ہے

ہم لوگ اس مقدس جمعہ کو گڈ فرائیڈے کیوں کہتے ہیں جب کہ یہودیوں اور رومیوں نے جو خداوند یسوع المسیح کے ساتھ کیا وہ بلکل بھی گڈ یا اچھا نہ تھا ہم وہ سب جو دکھ اس نے سہے انجیل مقدس میں متی کی انجیل اس کے ٢٦ اور ٢٧ باب میں دیکھ سکتے ہیں . جبکہ خداوند یسوع المسیح کی موت کے بہت اچھے نتائج سامنے آ ئے اور اسکی صلیب کی موت نے یہ ثابت کر دیا کہ وہ اپنے وعدے کے مطابق اور اپنے آسمانی باپ کی مرضی کے مطابق سب برداشت کرے گا اور اس کے ہلاک ہونے سے ہم سب زندگیاں پائیں گے شاید اسی وجہ سے ہم اس مقدس جمعہ کو گڈ فرائیڈے کہتے ہیں

رومیوں ٥باب ٨ آیت ” لیکن خدا اپنی محبت کی خوبی ہم پر یوں ظاہر کرتا ہے کہ جب ہم گنہگار تھے تو مسیح نے ہماری خاطر جان دی

١پطرس٣باب ١٨آیت ” اس لیے مسیح نے بھی یعنی راستباز نے ناراستوں کے لیے گناہوں کے باعث ایک بار دکھ اٹھایا تاکہ ہم کو خدا کے پاس پہنچائے . وہ جسم کے اعتبار سے تو مارا گیا لیکن روح کے اعتبار سے زندہ کیا گیا

خدا نے ہمارے گناہوں کی خاطر اپنا اکلوتا بیٹا قربان کیا خداوند یسوع المسیح ہمارے لیے ہماری وجہ سے مصلوب کیے گئے . وہ جسمانی موت مرے اور روحانی طور پر زندہ کیے گئے . وہ آج بھی زندہ ہے اور ہم سب کے درمیان ہے

عالمی اخبار شعبہ تحقیق
اس مضمون کی تیاری میں انٹرنیٹ مواد سے بھی مدد لی گئی

SHARE

LEAVE A REPLY