پندرہ اپریل 1990میخائیل گوربارچوف سوویت یونین کے پہلے انتظامی صدربنے

0
42

پندرہ اپریل انیس سو نوے میخائیل گوربارچوف سوویت یونین کے پہلے انتظامی صدر منتخب ہوئے
سابق سوویت رہنما میخائل گورباچوف نے مغرب پر ‘روس کو اشتعال دلانے’ کا الزام عائد کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ سنہ 1991 میں سوویت یونین ‘دھوکہ بازی’ کی وجہ سے ٹوٹا تھا۔
ان خیالات کا اظہار سوویت یونین کے بکھرنے کے 25 سال بعد ماسکو میں بی بی سی کے سٹیو روزنبرگ کے ساتھ انٹرویو میں کیا۔
85 سالہ میخائل گورباچوف خاصے عرصے سے علیل ہیں تاہم ان کی حس مزاح اب بھی جوان ہے۔
جب ہماری ملاقات ہوئی تو انھوں نے اپنی چھڑی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا ‘دیکھو، اب مجھے زمین پر چلنے کے لیے تین ٹانگوں کی ضرورت پڑتی ہے۔’
میخائل گوباچوف نے اس لمحے کے بارے میں بات کرنے کی ہامی بھری جس نے دنیا تبدیل کر دی، وہ دن جب سپر پاور سوویت یونین بکھر گیا۔
انھوں نے بتایا:’جو کچھ بھی سوویت یونین میں ہوا وہ میرا ڈراما تھا، اور یہ ڈراما ان سب کے لیے تھا جو سوویت یونین میں رہتے تھے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پندرہ اپریل انیس سو تریسٹھ پاکستان اور بھارت کے مابین کشمیر کے مسئلے پر کلکتہ مذاکرات کے اختتام پر مشترکہ اعلامیہ جاری ہوا

پندرہ اپریل انیس سوستاون برطانیہ ایٹمی دھماکا کرنے والا تیسرا ملک بن گیا

SHARE

LEAVE A REPLY