مرکزاطلاعات فلسطین
فلسطین کے علاقے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر نابلس میں قائم جامعہ النجاح میں کل منگل کو ہونے والے طلباء یونین کے انتخابات میں تحریک فتح کے حمایت یافتہ گروپ یوتھ فورس نے 41 نشستوں کے ساتھ پہلی اور 34 سیٹوں کے ساتھ اسلامک بلاک نے دوسری پوزیشن حاصل کی ہے۔ مجموعی طو پران دونوں تنظیموں نے 93 فی صد نشستیں حاصل کی ہیں۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق جامعہ النجاح میں طلباء سے متعلق امور کے انچارج موسیٰ ابو دیہ نے کہا کہ تحریک فتح کے یوتھ فورس جسے ’شہداء بلاک‘ بھی کہا جاتا ہے نے 81 میں سے 41 نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے جب کہ اسلامی تحریک مزاحمت ’حماس‘ کے حمایت یافتہ اسلامک بلاک نے 34 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی۔

پیپلز فرنٹ کے طلباء گروپ شہید ابو علی مصطفیٰ بلاک نے تین جب کہ عمر قاسم اور اتحاد گروپ نے کل تین سیٹٰوں پر کامیابی حاصل کی ہے،’فلسطین سب کے لیے‘ بلاک نے کوئی  سیٹ حاصل نہیں کی۔

ابودیہ نے بتایا کہ طلباء یونین کے انتخابات میں ٹرن آؤٹ 58 فی صد رہا۔ مجموعی طور پر 20 ہزار 237 طلباء و طالبات میں سے 11 ہزار طلباء نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔

سنہ 2013ء میں جامعہ النجاح میں ہونے والے طلباء یونین کے انتخابات میں فتحاوی گروپ کو 43 نشستوں پر کامیابی حاصل کی تھی جب کہ اسلامک بلاک نے 33 نستیں جیتی  تھیں۔ اس وقت ٹرن آؤٹ 60 فی صد بتایا گیا تھا۔

خیال رہے کہ غرب اردن میں طلباء یونین کے انتخابات پر اثر انداز ہونے کے لیے تحریک فتح اور فلسطینی اتھارٹی ایڑی چوٹی کا زور لگاتی رہی ہے۔ اسلامک بلاک کے نمائندگان کی بار بار گرفتاریوں اور انہیں انتخابی مہم سے دور رکھنے کے لیے ہرطرح کے حربے استعمال کیے گئے تاہم اس کے باوجود تحریک حماس کے حمایت یافتہ تنظیم نے دوسری پوزیشن حاصل کی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY