شمالی کوریائی ذرائع ابلاغ کے مطابق امریکا ایک انتہائی بڑے حملے کے لیے تیار رہے۔ شمالی کوریا کی یہ نئی دھمکی امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹِلرسن کے اس تازہ بیان کے تناظر میں ہے جس میں کہا گیا کہ واشنگٹن حکومت ایسے اقدامات پر غور کر رہی ہے، جن سے شمالی کوریا پر زیادہ سے زیادہ دباؤ بڑھایا جا سکے۔

شمالی کوریا کے سرکاری اخبار روڈونگ سِنمُن نے لکھا ہے کہ شمالی کوریا کے سُپر مائٹی حملے میں خطے میں موجود صرف امریکی افواج کا صفایا ہی نہیں ہو گا بلکہ امریکی سرزمین بھی جل کر راکھ میں بدل جائے گی۔ جزیرہ نما کوریا میں حالیہ کشیدگی کی وجہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے سخت موقف اختیار کرنے کے بعد پیدا ہوئی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY