آصف علی زرداری, اس بار میاں صاحب گھر نہیں کسی اور گھر جائیں گے

0
46

سابق صدر آصف علی زرداری نے دعویٰ کیا ہے الیکشن ہارے نہیں، آراوز نے ہرایا ہے، لگتا ہے اس بار میاں صاحب گھر نہیں کسی اور گھر جائیں گے جبکہ بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ پاناما کیس کے فیصلے سے ثابت ہوگیا کہ دو پاکستان اور دو قانون ہیں، ایک پاکستان شریفوں کے لئے جبکہ دوسرا عوام کے لئے ہے۔

جھنگ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سابق صدر آصف زرداری کا کہنا تھا کہ ملک وقوم کو لوٹا گیا، اب حساب کتاب کا وقت ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح پرویز مشرف کو گھر بھیجا تھا میاں صاحب کو بھی گھر بھیجیں گے۔ میاں صاحب آپ پائے اور سرکاری روٹیاں کھانے کے سوا کچھ نہیں کرسکتے۔ آصف زرداری کا مزید کہنا تھا کہ ہم 2013 کےالیکشن کے ڈھونگ کو بے نقاب کریں گے۔ پیپلزپارٹی نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگایاہے۔ پاناما فیصلے کے بعد چاروں صوبوں کو وزیراعظم سے نجات چاہئے۔

جلسے سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ایک قانون شریفوں کیلئے ہے اور دوسرا قانون غریب عوام کیلئے ہے۔ بے نظیر کی حکومت کو آئین کے ایک آرٹیکل کے تحت ختم کردیا جاتا ہے۔ جس جے آئی ٹی میں حکومت کے پسندیدہ افسر ہوں گے اس سے کیا توقع کی جاسکتی ہے۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ ہمیں نہ دو پاکستان چاہئیں اور نہ دو قانون، ہمیں ایک پاکستان اور ایک قانون چاہیے۔ پیپلزپارٹی ایسے پاکستان کیلئے جدوجہد کررہی ہے جس میں امیر اور غریب کیلئے ایک جیسا قانون ہوگا

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کہتے ہیں کہ ان شریفوں پر کوئی قانون لاگو نہیں ہوتا، ان کے مقررہ کردہ افسروں کی جے آئی ٹی سے قوم کیا امید رکھ سکتی ہے ۔

جھنگ میں پیپلز پارٹی کے جلسہ عام سے خطاب میں انہوں نے کہا کہ کب تک اس ملک میں دو قانون چلیں گے، ایک وزیراعظم کو چار تین کے فیصلے پر پھانسی،جبکہ دوسرے وزیراعظم کو تین دو کے فیصلے پر بری کردیتے ہو۔

بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ ایک خط نہ لکھنے پر گیلانی کو گھر بھیج دیا جاتاہے، نہ ہی ہمیں دو پاکستان چاہئیں، نہ ہی دو قانون، ہمیں ایک پاکستان اور ایک قانون چاہیے، امیر غریب کے لیے ایک ہی قانون ہو۔

انہوں نے کہا کہ میاں صاحب، آپ مکمل طورپر بری نہیں ہوئے، دو سینئر ججز نے آپ کو نااہل قرار دے دیا، تھوڑی سی بھی شرم حیا ہے تو فوری استعفیٰ دیں، آپ کے خلاف توعوام کی عدالت نے بھی فیصلہ دے دیا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY