سینئر بھارتی اداکار ونود کھنہ ستر سال کی عمر میں ممبئی کے ایک اسپتال میں چل بسے۔ انہیں کینسر کا مرض تھا تاہم پچھلے دنوں انہیں جسم میں پانی کی کمی ہوجانے کی شکایت پر اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔

ونود کھنہ نے بھرپور اور ہنگا مہ خیز زندگی گزاری۔ وہ بھارتی جنتا پارٹی کی جانب سے رکن پارلیمنٹ بھی رہے ۔

ونودکھنہ 6 اکتوبر1946کو بھارتی پنجاب کے ضلع گرداس پور میں پیدا ہوئے ۔انہوں نے 1968سے2013 تک بالی ووڈ فلموں میں کام کیا ، اس دوران 141فلمیں دیںجن میں کئی سپرہٹ فلمیں بھی شامل ہیں۔

میراگاؤں میرا دیش، غدار، جیل یاترا، امتحان، انکار، کچے دھاگے، امر اکبر انتھونی ، راجپوت، قربانی، قدرت، دیاوان، سوریہ ان کی کامیاب فلمیں رہیں۔

انہوں نے فنی کیرئر کا آغاز منفی رولز سے کیا لیکن پھر ہیرو کے طور پر بھی چھاتے چلے گئے۔

امتیابھ بچن کےاسٹارڈام کے لئے ایک دور میں وہ سنگین خطرہ قرار دیئے گئے تھے لیکن اسی دوران انہیں اپنے مذہب سے اس قدر لگاؤ ہوگیا کہ وہ رجنیش نامی ایک سادھو کے چیلے بن گئے اور فلمی دنیا ترک کردی ، تاہم اس کے باوجود شہرت نے ان کا تعاقب جاری رکھا اور ایک دن انہیں پرستاروں کی ضد پر فلموں میں واپس آنا پڑا

SHARE

LEAVE A REPLY