پاکستان کی جانب سے دس ہزاررنزبنانے والے واحد ٹیسٹ بیٹسمین کرکٹ کے میدانوں سے رخصت ہوگئے۔ آخری ٹیسٹ میں یونس خان اٹھارہ اور پینتیس رنزبناکرآؤٹ ہوئے۔ یونس خان پاکستان کو ورلڈ ٹی ٹوئنٹی چیمپئن بنانے والے واحد کپتان بھی ہیں۔

yunus khan farewell

لیجنڈری بیٹسمین یونس خان نے فروری دوہزارمیں راولپنڈی میں سری لنکا کے خلاف ٹیسٹ ڈیبیوکیا اور پہلے ہی ٹیسٹ کی دوسری اننگ میں ایک سوسات رنز اسکورکئے۔ ویسٹ انڈیزکےخلاف سیریز سے قبل انہوں نے ریٹائرمنٹ کااعلان کیاتھا۔ الوداعی ٹیسٹ میں یونس اٹھارہ اورپینتیس رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ انہیں دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں بیٹس کے سائے میں اورمیدان میں موجود شائقین نے کھڑے ہوکرپرجوش انداز میں الوداع کہا۔
رائٹ ہینڈر بیٹسمین شاندارکیریئر کے دوران پاکستان کی جانب سے دس ہزاررنزبنانے والے واحد بیٹسمین ہیں۔ انہوں نے ایک سوسترہ ٹیسٹ کی دوسوبارہ اننگز میں دس ہزارننانوے رنز اسکورکئے۔جس میں پاکستان کے لئے سب سے زیادہ چونتیس سنچریز اورتینتیس نصف سنچریاں شامل ہیں۔ سری لنکاکے خلاف دوہزارنوکے کراچی ٹیسٹ میں انہوں نے کیریئر بیسٹ تین سوتیرہ رنز اسکورکئے۔ ان کے اسکور میں چھ ڈبل سنچریاں شامل ہیں۔
دوسوپینسٹھ ون ڈے میچز میں یونس خان کے بیٹ سےسات ہزاردوسواننچاس رنزسات سنچریز اوراڑتالیس ففٹیز سمیت نکلے۔پچیس ٹی ٹوئنٹی میچوں میں انہوں نےچارسوبیالیس رنزدوففٹیز کی مدد سے بنائے۔انہیں دوہزارنو میں پاکستان کوورلڈٹی ٹوئنٹی چیمپئن بنانے کااعزاز بھی حاصل ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پاکستان کے کامیاب ترین ٹیسٹ  کپتان مصباح الحق آخری ٹیسٹ اننگ میں دورنزبناکرآؤٹ ہوگئے۔ پچھہتر ٹیسٹ میچزکی ایک سوبتیس اننگز میں مصباح الحق نے پانچ ہزاردوسواکیاسی رنز اسکورکئے۔

Misbah farewell

پاکستان کےکامیاب ترین ٹیسٹ کپتان مصباح الحق نے الوداعی ٹیسٹ کی پہلی اننگ میں انتالیس ویں نصف سنچری بنائی  لیکن کیریئرکی آخری اننگ میں وہ دورنزبناکربشوکی گیند پروکٹ کیپرڈاروچ کاکیچ بنے۔ دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں نے انہیں گرم جوشی سے بیٹس کے سائے میں میدان سے رخصت کیا۔ مصباح الحق نے دوہزارایک میں آکلینڈ میں نیوزی لینڈ کے خلاف ٹیسٹ کیریئر کا آغاز کیا۔پچھتر ٹیسٹ میچز میں دس سنچریز اورانتالیس ففٹیزسمیت انہوں نے پانچ ہزاردوسواکیاسی رنزبنائے۔

دوہزاردس کے اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کے بعد مشکل حالات میں مصباح الحق کوکپتان مقررکیاگیا  اورانہوں نے چھپن ٹیسٹ میں قیادت کرتے ہوئے پچیس فتوحات اورانیس ناکامیوں کاسامناکیا۔گیارہ ٹیسٹ ڈرا ہوئے۔ ویسٹ انڈیزکے خلاف جاری ٹیسٹ کاابھی فیصلہ ہونا باقی ہے۔ رائٹ ہینڈر بیٹسمین نے پہلی سنچری بھارت کے خلاف دہلی میں ایک سواکسٹھ رنزناٹ آؤٹ بنائی۔یہی ان کے کیریئرکا بہترین اسکوربھی ہے۔

دوہزارچودہ میں انہوں نے یواے ای آسٹریلیا کے خلاف ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں سینکڑے جوڑے۔ دوسری اننگ میں صرف چھپن گیندوں پرسنچری بناکرعظیم ویوین رچرڈ کا عالمی ریکارڈ برابرکیا۔ایک سوباسٹھ ون ڈے میچوں میں مصباح نے پانچ ہزارایک سوبائیس رنز بنائے۔ جس میں نونصف سنچریاں شامل تھیں۔انتالیس ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں سات سواٹھاسی رنزتین ففٹیزسمیت بنائے۔

SHARE

LEAVE A REPLY