بلال اس میں پگھلتا ہے قلندر

0
63

بنا کر جون بھجوایا گیا ھوں
یزیدیت سے ٹکرایا گیا ھوں

میں خود جاتا مری اوقات کیا تھی
دَرِ حیدر پہ بُلوایا گیا ہُوں

ثَنائے حیدر و زہرا کی خاطر
میں بزمِ دَہر میں لایا گیا ہُوں

مِثالِ حَضرتِ عَمار میں بھی
ہُجومِ شَر سے لَڑوایا گیا ہُوں

تمہاری بزم میں اے اہلِ اُلفت
عَلی کی یاد میں آیا گیا ہُوں

دِفاعِ حُرمتِ نفسِ نبی میں
میں کَب بولا ہُوں بُلوایا گیا ہُوں

مُجھے ڈھونڈا گیا مَحشر کے دِن جب
عَلی کے شہر میں پایا گیا ہُوں

مذمت کے لئے اہل جفا کی
بطور خاص بلوایا گیا ہوں

بلال اس میں پگھلتا ہے قلندر
میں جس بھٹی میں پگھلایا گیا ھو

بلال رشید

SHARE

LEAVE A REPLY