تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سربراہ عمران خان کی جانب سے وفاقی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنانے پر مسلم لیگ نواز کے رہنماؤں کا کہنا ہے کہ عمران خان کا سیاسی کیرئیر ختم ہوچکا ہے۔

پی ٹی آئی کے یوم تشکر کے حوالے سے جلسے کے اختتام کے فوری بعد وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے وزیر مملکت اطلاعات مریم اورنگزیب، خواجہ سعد رفیق اور طارق فضل نے کہا کہ اُمید تھی کہ دھرنا ختم کرنے کے بعد عمران خان جلسے میں کوئی مثبت بات کرے گے تاہم انھوں نے یوم تشکر کے نام پر اپنی سرکشی جاری رکھی۔

وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ اُمید تھی کہ عمران خان اپنے جلسے میں پاکستان کے دیگر اہم مسائل کے ساتھ ساتھ کشمیر کے ایشو پر بھی بات کریں گے لیکن عمران خان اور ان کے ساتھیوں کا ہدف صرف حکومت تھی۔

پی ٹی آئی سربراہ کو مخاطب کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ نوازشریف کا مقابلہ کرنا ہے تو ان جیسا ظرف بھی خود میں پیدا کریں۔

عمران خان کی جانب سے وزیراعظم کی تلاشی لینے کے اعلان پر انھوں نے کہا کہ آپ کیا تلاشی لیں گے ‘ہم نے ہر سول اور آمرانہ دور حکومت میں ہمیشہ تلاشی دی’۔

پی ٹی آئی سربراہ پر طنز کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ یوم تشکر کے نام پرعمران خان اوران کے ساتھیوں نے سرکس سجایا، ‘بے ادب شخص ہمیشہ نامراد رہتا ہے’۔

وفاقی وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ ہم چاہتے ہیں عمران خان اب گڈ بوائے بن جائیں۔

انھوں نے کہا کہ عمران خان جیسا یوٹرن لینے والا شخص نہیں دیکھا، تحریک انصاف ایک کالا چشمہ پارٹی بن چکی ہے، جو رات کی تاریکی میں تو جلسے کرسکتی ہے تاہم دن میں جلسے کرنے سے قاصر ہیں۔

سعد رفیق کا کہنا تھا کہ کسی شخص کوعدالتوں پردباؤاوراس کیخلاف سازش کی اجازت نہیں دے سکتے، عمران خان سپریم کورٹ کی توہین کے مرتکب ہوئے ہیں، عمران خان عدالتی مفرورہیں، یہ انکے لیے قانونی اصطلاح ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس کا معاملہ اب عدالت میں ہے اور اس پر ہر کسی شخص کو تبصرہ کرنے سے پرہیز کرنا چاہیے۔

جلسے میں 10 لاکھ افراد کی شرکت کے دعوے پر مسلم لیگ نواز کے رہنما نے کہا کہ حیران ہوں 6 ہزار کرسیوں پر 10 لاکھ افراد کیسے بیٹھ گئے، یہ پی ٹی آئی کا ہی کارنامہ ہے اور وہ ایسا کرسکتے ہیں۔

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کی جانب سے اسلام آباد پر چڑھائی اور حکومت کو تنقید کا نشانہ بنانے پر وفاقی وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ پرویز خٹک نے پختون اور پنجاب کا نعرہ لگا کر ریاست سے زیادتی کی۔

اس موقع پر مریم اورنگ زیب نے کہا کہ عمران خان نے سیاست سے وضع داری ختم کرنے کی بھونڈی کوشش کی اور عمران خان کا سیاسی کیرئیر ختم ہوچکا ہے۔

انھوں نے دعویٰ کیا کہ عمران خان گالم گلوچ کرتے ہیں اور پی ٹی آئی کے سربراہ جب بھی ٹی وی پر آتے ہیں تو مائیں ٹی وی بند کردیتی ہیں۔

عمران خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ اب بھی وقت ہے کہ وہ خیبرپختونخوا میں عوام کی خدمت کریں، خیبرپختونخوا کے لوگ عمران خان کا انتظار کررہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ دھرنا روکنے کیلئے حکومت نے جو بھی اقدامات کیےعوام کے جان ومال کے تحفظ کیلئے کیے۔

اس سے قبل اسلام آباد کے پریڈ گراؤنڈ میں تحریک انصاف کے ’یوم تشکر‘ کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ’پرویز خٹک آج آپ پاکستان کے ہیرو بن چکے ہیں، میں آپ کو پاکستان کی عوام کی طرف سے خراج تحسین پیش کرتا ہوں، خیبر پختونخوا سے آنے والے قافلے پر جس طرح کی شیلنگ کی گئی اس سے ایسا لگ رہا تھا جیسے اس میں شامل لوگ پاکستانی نہیں بلکہ دشمن ہیں

SHARE

LEAVE A REPLY