پانچ جنوری ایسا دن نہیں جو سال میں ایک دن یاد رہے..محمد عرفان فانی

0
244

پانچ جنوری 1949 کا دن ایسا بہیانک ترین دن ہے جسکی وجہ سے آج تک کشمیری خون میں تڑپ رہے ہیں———– اقوام متحدہ جیسے ظالم مکار دغے باز دہشتگر مسلمانوں کا دشمن ادارے نے ہندستان کی الحاق کشمیر قراداد منظور کی تھی——— اسی اندھے گونگے بہرے ادراے کی وجہ سے بچھلے 70 سالوں سے کشمیری کٹ رہے ہیں
‏::
اقوام متحدہ نے ہمیشہ ہندستانی دہشتگرد حکومت کا ساتھ دیا———- ہمیشہ اسکی غلطیوں پہ پردہ ڈالا——— لاکھوں کشمیری انڈین دہشتگرد ظالم فوج کے ہاتھوں شہید ھوئے——— بے دردی و بے رحمی سے قتل کیئے گے لیکن اقوام متحدہ نے کبھی اس بات کا ایکشن نہیں لیا——— اس دہشتگرد فوج سے یہ نہیں پوچھا کہ تم نے قتل عام کیوں کیا
‏::
قراداد منظور کرتے وقت اس آندھے ادارے کو اتنا نہیں پتہ چلا کہ کشمیر ایک علیدہ ریاست ہے——— اس ریاست کی اپنی حکومت تھی——— اس ریاست کا اپنا قانون تھا——– اس پہ جابرانہ قبضہ کیا گیا ہے———– الحاق ہندستان قراداد کا بیک گرونڈ جانے بنا——— بنا تحقیق کیئے اسکو منظور کر لیا گیا——— چاہیئے تو یہ تھا کہ پوری جانکاری کی جائے مہاراجہ نے کس وجہ سے ہندستان کو الحاق کا خط لکھا——— آخر ایسی کیا وجہ تھی جسکی بنا پر اس نے اپنی سلطنت ہندستان کو تحفہ میں پیش کر دی——- کہیں اسکو کشمیریوں کی بغاوت کا ڈر تو نہیں تھا یا پھر پاکستان کے حملے کا ڈر تھا..؟؟؟
‏::
مگر اقوام متحدہ نے ایسا ہر گز نہ کیا——– اس نے 5 جنوری 1949 کو کشمیریوں کی زندگیوں میں غلامی کا طوق ڈال دیا——— کشمیریوں کی نسل کشی کرنے کا سگنیچر کر دیا——– لکھ دیا اس ظالم ادارے نے ہندستان کو کہ جا کشمیر میں لاشیں گرا—— دختران کشمیر کی عزتیں تار تار کر——— بچوں بوڑھو اور جوانوں کی لاشیں گرا——- انکے جسموں سے خون نچوڑ——– میں وہ خون صاف کروں گا——- میں تیری غلطیوں پہ پردہ ڈالوں گا——- میں تیری دہشتگردی کو حق کی جنگ قرار دوں گا
‏::
افسوس کے اسوقت وہ لوک خاموش رہے——– وہی اقوام متحدہ میں بیٹھ کر انھوں نے تالیاں بجائیں جو آج خود کو کشمیر کا وارث کہتے ہیں——— خود کو کشمیر کا محافظ کہتے ہیں——– اسوقت ان منافقوں میں اتنی جرأت نہ پیدا ھوئی کہ اس قراداد کیخلاف درخواست پیش کی جائے———- کیس لڑا جائے——— آج اقوام متحدہ میں مسلہ کشمیر لڑنے والے منافق 1949 میں الحاق ہندستان قراداد منظور ھوتے وقت تالیاں بجا رہے تھے———– ہندستان کو مبارکباد دے رہے تھے——— آج یہ منافق لوگ اور ظالم اقوام متحدہ کا ادارہ کشمیریوں کو بیوقوف بنا رہے ہیں——— کشمیریوں کو یہ بتا رہے ہیں ھم مسلہ کشمیر حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں——– یہ منافق آج بیان بازیاں کر رہے ہیں ہندستان کشمیر پہ جابرانہ قبضہ کیا ھوا ہے
‏::
اقوام متحدہ اور ان منافقوں کا گربان پکڑ کر ان سے پوچھے ظالمو اسوقت تم ہی وہ لوگ تھے جنھوں نے الحاق ہندستان کی قراداد منظور کی تھی——— منافقو تم ہی وہ لوگ تھے جنھوں نے تالیاں بجائی تھیں——— تم کشمیریوں کے ساتھ مخلص ھوتے تو قراداد کبھی منظور نہ کرتے—— تالیاں کبھی نہ بجاتے——— آج تم کشمیریوں کا کون سے مسلہ حل کر رہے ھو زرہ اسکی وضاحت کر دو….؟؟؟؟

محمد عرفان فانی

SHARE

LEAVE A REPLY