شامی دارلحکومت میں دوہرا بم حملہ، 40 ہلاک

0
235

شام کا صدر مقام ہفتے کے روز دوہرے بم دھماکوں سے لرز اٹھا۔ انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں مانیٹر کرنے والے ایک ادارے کے مطابق دوہرے بم حملوں میں کم سے کم چالیس افراد ہلاک ہوئے۔

مانیٹرنگ گروپ کے مطابق “مرنے والوں میں عراقی شیعہ زائرین کی بڑی تعداد شامل تھی جبکہ چالیس سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔ شام کے سرکاری ذرائع ابلاغ نے بھی اس امر کی تصدیق کی ہے کہ ہلاک ہونے والوں کی اکثریت کا تعلق عراق سے ہے۔

بشار الاسد حکومت کی ترجمان سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق تباہی دو خودکش بمباروں کی کارروائی ہیں جنہوں نے عین رش کے اوقات میں خودکش حملہ کیا۔

ایجنسی کے مطابق حملہ دمشق کے علاقے باب مصلی میں واقع ‘باب الصغیر’ نامی مزار کے پاس موجود تھے۔ باب الصغیر مقبرہ دمشق شہر کے مشہور سات دروازوں میں سے ایک دروازے کے پاس واقع ہے۔ اس میں اہل تشیع اور سنی مسلک کے پیروکاروں کے دینی مزارات واقع ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY