اپوزیشن لیڈر کا کہنا ہے کہ آئی جی سندھ ہٹانا حکومت کی صوابدید ہے سید خورشید شاہ نے حکومت سندھ کے خلاف ایم کیوایم کا وائٹ پیپر کو سورج کو چراغ دکھانے کے مترادف قرار دےدیا۔

سکھر میں میڈیا سے گفتگو میں اپوزیشن لیڈر نے پنجاب حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف غریبوں کا رونا روتے ہیں مگر کام کچھ نہیں کرتے انہیں کراچی کا کچرا تو نظر آگیا مگرجنوبی پنجاب میں غربت نظر نہیں آتی خورشید شاہ نے ایم کیو ایم کی جانب سے سندھ حکومت کی نوسالہ کارکردگی پر جاری کرنے والے وائٹ پیپر پر سخت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ سیاستدان ہوں منہ نہ کھلوائیں ایم کیو ایم والے تو بھتے کے لیے فیکٹری کو آگ لگادیتے ہیں ان کے لوگ منی لانڈرنگ میں ملوث رہے جن میں سے کئی بھا گ گئے اور کچھ ارب پتی بن گئے

انہوں نے ایم کیو ایم کے وائٹ پیپر کو سورج کو چراغ دکھانے کے مترادف قرار دیا ۔

میٹرک کے امتحانات میں ہونے والی نقل پر پوچھے گئے سوال پر اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ اس لعنت کی روک تھام کے لئے پورے ملک میں تعلیمی ایمرجنسی لگائی جائےفرسٹ ایئر اور سیکنڈ ایئر کےامتحانات کاسینٹرایک بنایا جائے تاکہ پڑھا لکھا معاشرہ وجود میں آسکے ۔اے ڈی خواجہ کے بارے میں پوچھے گئے سوال پر خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ آئی جی سندھ کو حکومت کی صوابدید ہے

SHARE

LEAVE A REPLY