ڈاکٹر عاصم کا نام ای سی ایل سے نکالنے سے متعلق درخواست میں سپریم کورٹ نے وزارت داخلہ سے ایک ہفتے میں جواب طلب کرلیا۔

جسٹس اعجاز افضل خان کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔اس موقع پر عدالت نے کہا کہ معاملے پر وزارت داخلہ کا موقف جاننا چاہتے ہیں۔

عدالت کا کہنا تھا کہ دیکھنا چاہتے ہیں ای سی ایل میں نام شامل کرنے کے لیے قانون کا اطلاق یکساں ہوتا ہے کہ نہیں، جاننا چاہتے ہیں کہ کیا پسند ناپسند کی بنیاد پر تو نام ای سی ایل میں شامل نہیں کیے جاتے۔

کیس کی مزید سماعت ایک ہفتے کے لیے ملتوی کردی گئی۔

SHARE

LEAVE A REPLY