نیو یارک دہشت گردی ، حملہ آور 29 سالہ ازبک نژاد سیفولو سائیپوو ہے

0
122

امریکہ میں پولیس حکام اور تحقیقاتی ادارے اس شخص کے ماضی اور محرکات کے بارے میں تفتیش میں مصروف ہیں جس نے منگل کو نیویارک کے علاقے مین ہیٹن میں راہ گیروں اور سائیکل سواروں پر ٹرک چڑھادیا تھا۔

امریکی تیوہار ہالووین کے موقع پر کی جانے والی اس کارروائی میں اب تک آٹھ افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہوچکی ہے جب کہ 11 افراد شدید زخمی ہیں۔

ٹرک ڈرائیور کو بعد ازاں ایک پولیس اہلکار نے گولی مار کر زخمی کرنے کے بعد حراست میں لے لیا تھا جو حکام کے مطابق تشویش ناک حالت میں اسپتال میں زیرِ علاج ہے۔

امریکی حکام نے تاحال حملہ آور کی شناخت ظاہر نہیں کی ہے لیکن امریکی ذرائع ابلاغ نے دعویٰ کیا ہے کہ حملہ آور 29 سالہ ازبک نژاد سیفولو سائیپوو ہے جو 2010ء میں قانونی طریقے سے امریکہ آیا تھا۔

حکام کے مطابق سائیپوو کے پاس امریکی ریاست فلوریڈا کا ڈرائیونگ لائسنس ہے لیکن وہ ممکنہ طور پر نیویارک سے متصل ریاست نیو جرسی میں مقیم تھا۔

نیویارک کے پولیس کمشنر جیمز اونیل نے صحافیوں کو بتایا ہے کہ منگل کی سہ پہر لگ بھگ 3:05 منٹ پر ایک شخص نے ‘ہوم ڈپو’ نامی معروف امریکی اسٹور سے کرایے پر لیا گیا ٹرک مین ہیٹن کے مصروف علاقے میں سائیکلوں کے مخصوص راستے پر چڑھا دیا تھا۔
کئی سائیکل سواروں اور راہ گیروں کو کچلنے کے بعد ٹرک ایک اسکول بس سے ٹکرا کر رک گیا تھا جس کے بعد ٹرک میں سوار شخص دونوں ہاتھوں میں پستولیں لہراتا ہوا ٹرک سے باہر نکل آیا جسے موقع پر پہنچنے والے پولیس اہلکار نے پیٹ پر گولی مار کر زخمی کرنے کے بعد حراست میں لےلیا تھا۔

پولیس کے مطابق واقعہ لوئر مین ہیٹن میں 11 ستمبر 2001ء کے حملوں میں تباہ ہونے والے ورلڈ ٹریڈ سینٹر کی یادگار کے نزدیک پیش آیا۔

ارجنٹائن کی وزارتِ خارجہ کے مطابق مین ہیٹن حملے میں ہلاک ہونے والوں میں ارجنٹائن کے پانچ شہری شامل ہیں جو تفریح کی غرض سے نیویارک گئے تھے۔

بیلجئم کے نائب وزیرِ اعظم ڈیڈیئر رینڈرز نے بتایا ہے کہ حملے میں بیلجئم کا ایک شہری بھی ہلاک ہوا ہے۔

زخمی ہونے والوں میں اس اسکول بس میں سوار بعض طلبہ اور عملے کے افراد بھی شامل ہیں جسے ٹرک سوار نے ٹکر ماری تھی۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ڈرائیور نے ٹرک سے باہر آتے وقت عربی میں “اللہ اکبر” کے نعرے لگائے تھے۔ تاہم جب پولیس کمشنر سے صحافیوں نے اس بارے میں سوال کیا تو ان کا کہنا تھا کہ حملہ آور نے ٹرک سے نکلتے وقت کچھ کہا تو تھا لیکن اس وقت وہ اس کے بارے میں مزید بات نہیں کرنا چاہتے۔

SHARE

LEAVE A REPLY