اثاثہ جات ریفرنس: نیب کی اسحاق ڈار کو اشتہاری قرار دینے کی استدعا پر فیصلہ محفوظ

0
86

سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی میڈیکل رپورٹ اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیش کر دی گئی۔ عدالت نے دونوں جانب سے استدعا پرفیصلہ محفوظ کر لیا جو آج ہی سنایا جائے گا۔

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے اسحاق ڈار کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت کی۔ وکیل صفائی حسین مفتی نے موقف اپنایا کہ اسحاق ڈار کی نئی میڈیکل رپورٹ آ گئی ہے، اشتہاری قرار دینے کی کارروائی روکی جائے، سابق وزیر خزانہ اگلے ہفتے ایم آر آئی کرائیں گے، عدالت چاہے تو برطانیہ میں پاکستانی سفارتخانہ اسحاق ڈار کا معائنہ کر سکتا ہے۔

وکیل صفائی حیسن مفتی نے عدالت سے سماعت ملتوی کرنے کی استدعا کی جس پر نیب پراسیکیوٹر نے مخالفت کرتے ہوئے کہا جج صاحب! ہمیں اسحاق ڈار کے دل میں تکلیف کا بتایا گیا تھا، آج پتہ چلا انکے مرض کی تشخیص تاحال نہیں ہوئی، اسحاق ڈار کی انجیو گرافی رپورٹ پیش نہیں کی گئی، وہ باہر بیٹھ کر عدالت کو گمراہ کر رہے ہیں۔

نیب پراسیکیوٹر نے کہا اسحاق ڈار بیمار نہیں تو عدالت سے کیوں بھاگ گئے، عدالت کو بتایا جائے انکو کیا بیماری ہے؟۔ نیب پراسیکیورٹر نے عدالت سے استدعا کی کہ اسحاق ڈار جان بوجھ کر مفرور ہیں، اشتہاری قرار دیا جائے۔

SHARE

LEAVE A REPLY