افغان صوبے ننگر ہار میں ایک جنازے پر کیے گئے خوکش حملے میں کم از کم سترہ افراد مارے گئے ہیں۔ خودکش حملہ مشرقی افغان صوبے کے ضلع بہسُود میں کیا گیا۔ اس حملے میں دیگر چودہ افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔ ا

فغان ضلع ہَسکہ مِینا کے انتظامی افسر کے جنازے کے لیے جمع افراد میں شریک ہو کر حملہ آور نے اپنی بارودی جیکٹ کو اڑایا۔ افغان طالبان نے مس حملے سے لاتعلقی کا اظہار کیا ہے۔

سکیورٹی حلقوں کا خیال ہے کہ یہ حملہ کسی عسکریت پسند گروپ کی کارروائی ہو سکتی ہے تاہم ابھی تک کسی عسکریت پسند گروپ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY