نواز شریف کے 3 نیب ریفرنسز کی سماعت 9 جنوری تک ملتوی

0
91

اسلام آباد کی احتساب عدالت میں نواز شریف ، ان کی بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کے خلاف تین نیب ریفرنسز کی سماعت 9 جنوری تک ملتوی کردی گئی۔ دو گواہوں کے بیانات قلمبند ، مزید 6گواہوں کوطلبی کے نوٹسز جاریکر دیئے گئے۔

نواز شریف کی احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر لیگی کارکنان اور رہنما جوڈیشل کمپلیکس کے باہر موجود تھے۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کیس کی سماعت کی۔

سماعت کے موقع پر استغاثہ کے گواہ محمد تسلیم نے بیان قلمبند کراتے ہوئے کہا کہ ان لینڈ ریونیو کی عہدیدار فضا بتول کے حکم پر نیب آفس گیا جہاں نواز شریف، حسن اور حسین نواز کا ویلتھ ٹیکس ریکارڈ فراہم کیا جب کہ فضا بتول کا تصدیق شدہ ریکارڈ بھی جمع کرایا۔

گواہ محمد تسلیم نے بتایا کہ 21 اگست کو نیب میں ان لینڈ ریونیو کے نمائندہ جہانگیر احمد بھی موجود تھے جنہوں نے تفتیشی افسر کامران محبوب کو نواز، حسن اور حسین کا انکم ٹیکس ریکارڈ فراہم کیا جب کہ ریکارڈ وصول کرنے کے بعد بیان بھی قلم بند کرایا۔

استغاثہ کے گواہ کمشنر ان لینڈ ریونیو محمد تسلیم نے اپنا بیان قلمبند کرانے کے بعد جاتے ہوئے نواز شریف سے ہاتھ ملا کر گئے۔

ایون فیلڈ ریفرنس میں استغاثہ کے گواہ اسسٹنٹ ڈائریکٹر نیب زوار منظور نے اپنا بیان قلمبند کرایا اور کہا کہ جوائنٹ رجسٹرار ایس ای سی پی سدرہ منصور نے پیش ہو کر حدیبیہ پیپر ملز کا سالانہ آڈٹ ریکارڈ فراہم کیا۔

گواہ نے بتایا کہ ریکارڈ تفتیشی افسر نے میری موجودگی میں تحویل میں لیا اور میں نے بطور گواہ ریکارڈ پر دستخط کیے، تفتیشی افسر کے سامنے 6 ستمبر 2017 کو پیش ہوا، کلرک محمد رشید نے 11 صفحات پر مشتمل دستاویزات جمع کرائیں، چار صفحات پر مشتمل لندن کوئین بنچ کا حکم نامہ بھی جمع کرایا گیا۔

آج نواز شریف10، مریم نواز 12 جبکہ کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر14 مرتبہ عدالت کے روبرو پیش ہوئے ہیں۔ تینوں نیب ریفرنسز میں اب تک استغاثہ کے 10 گواہان سدرہ منصور، جہانگیر احمد، محمد رشید، مظہر بنگش، شہباز حیدر، ملک طیب، مختار احمد، عمردراز، یاسر شبیر اور شکیل ناگرا بیانات ریکارڈ کرا چکے ہیں۔

اس سے قبل سابق وزیر اعظم نواز شریف گزشتہ را ت سعودی عرب سےوطن پہنچے ہیں۔ سعودی عرب میں قیام کے دوران انہوں نے مکہ مکرمہ میں طواف کعبہ کیا، مدینہ منورہ میں روضہ رسول پر حاضری دی، نواز شریف نے شہباز شریف کے ہمراہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ملاقات بھی کی ۔

واضح رہے کہ ابھی تک فلیگ شپ انوسٹمنٹ کی 18، ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس کی17جبکہ العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس کی 21 سماعتیں ہوچکی ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY