وزیر مملکت خزانہ رانا محمد افضل نے کہا ہےکہ امریکی صدر کے بیان پر دنیا پاکستان کا ساتھ دے رہی ہے، آئی ایم ایف پروگرام میں نہیں جارہے ہیں،

عمران خان نے آج تک کسی اچھے کام کی تعریف نہیں کی ۔

کراچی میں پریس کانفرنس سے اپنے خطاب میں وزیر مملکت خزانہ رانا افضل نے کہا کہ امریکا افغانستان میں اپنی ناکامی کی ذمہ داری پاکستان پر ڈال رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا نے جہاں 1250 ارب ڈالر دہشت گردی کی خلاف جنگ پر خرچ کئے ، کچھ اور رقم بارڈر سیکیورٹی پر بھی خرچ کرے، دراندازی روکنے کے لئے سرحد پر باڑ لگانے پر کام ہورہا ہے، افغانستان میں ہمارا کوئی مفاد نہیں۔ مستحکم افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے، انہوں نےکہا کہ مذاکرات سے امریکی اعتراضات دور کریں گے۔

ملکی معیشت پر بات کرتے ہوئے رانا افضل نےکہا کہ معیشت مستحکم ہے، صنعتی شعبہ ترقی کررہا ہے ، 5ماہ میں برآمدات 17 فیصد بڑھی ہیں ، غیر ضروری درآمدات کم کرنے پر توجہ ہے۔

رانا افضل کا کہنا تھا کہ زرمبادلہ کے ذخائر 19 ارب 70 کروڑ ڈالر ہے۔ بیرونی قرضوں کی ادائیگی معمول کے مطابق ہے، آئی ایم ایف پروگرام میں جانے کا ارادہ نہیں البتہ ترقیاتی منصوبوں کے لئے تمام دروازے کھلے رکھے ہوئے ہیں۔

ملکی سیاسی صورتحال پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ احتساب کا مطلب یہ نہیں کہ ملکی معیشت کو ٹھپ کردیں ، انہوں نے کہا کہ عمران خان نے کبھی کسی اچھے کام کی تعریف نہیں کی۔

SHARE

LEAVE A REPLY