قومی کرکٹ کے ٹیسٹ ٹیم کپتان مصباح الحق نے دورہ ویسٹ انڈیز کو اپنی ٹیسٹ اننگز کا آخری دورہ قرار دیتے ہوئے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا۔

لاہور میں میڈیاکے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے مصباح الحق نے اپنے کرکٹ کیریئر کو خیر آباد کہنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ویسٹ انڈیز کے خلاف آخری ٹیسٹ سیریز کھیلوں گا۔ انہوں نے کہا کہ کرکٹ کا سفر بہت اچھا رہاہے ، میں خوش ہوں اور اپنی جو کچھ بھی میری اچیومنٹ ہیں اس سے مطمئن ہوں۔ ٹیسٹ ٹیم کے کپتان کا کہنا تھاکہ کوشش ہے کہ اچھے نوٹ پر کیریئر ختم کروں۔

میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا انٹر نیشنل کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے بعد کچھ عرصہ مزید ڈومیسٹک کرکٹ کھیلتا رہوں گا ابھی ایسا کوئی ارادہ نہیں بنایا کہ ریٹائرمنٹ کے بعد کیا کرنا ہے ان کا کہنا تھا کہ 2011اور 2015کا ورلڈ کپ جیتنا خواب تھا جو کہ پورا نہیں ہو سکا لیکن ہر انسان کی بہت سے خواہشیں پوری نہیں ہوتیں ۔

ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ ویسٹ انڈیز سے سیریز میں جیت کر ٹیم کا مورال بلند کرنا ہے سرفراز کی کپتانی سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ سرفراز احمد ابھی ٹیسٹ میں وائس کپتان ہیں جبکہ باقی دونوں فارمیٹ میں کپتانی کے فرائض سرانجام دے رہے ہیں ان کو سپورٹ کرنا چاہیے تاکہ سرفراز احمد پر کسی قسم کا دباﺅ نہ ہو۔

قومی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان کا کہنا تھا کہ پی سی بی نے ہمیشہ مجھے سپورٹ اور اعتماد کیا جس پر ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ نیوزی لینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز جیت کر نمبر ون بنی تو یہ میرے لئے سب سے یادگار لمحہ تھا جب کہ بھارت کے خلاف ورلڈ کپ میں شکست ناقابل فراموش لمحہ تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY