آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ مستونگ میں کامیاب آپریشن سے داعش کا انفرا اسٹرکچر بنانے کی کوشش ناکام بنائی اور مولانا عبدالغفور حیدری پر حملے میں ملوث دہشت گرد بھی مارے گئے۔

آئی ایس پی آر نے مستونگ آپریشن کی مزید تفصیلات جاری کرتے ہوئے بتایاکہ انٹیلی جنس معلومات پر یکم سے 3 جون تک سیکیورٹی فورسز نے آپریشن کیا ۔

کالعدم لشکر جھنگوی العالمی کے 10سے15 دہشت گردوں کے ایک غارمیں موجودگی کی اطلاع تھی جو مستونگ سے 36کلومیٹر جنوب مشرق میں اسپلنگی کے قریب تھا ۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آپریشن کا آغاز ہیلی بورن فورس اُتارنے کے ساتھ کیا گیا جس میں 12 دہشت گرد ماردیئے گئے جن میں مولانا عبدالغفور حیدری پر حملے میں ملوث دہشت گرد بھی شامل ہے۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ کالعدم تنظیم داعش سے رابطوں کی کوشش کر رہی تھی اور بلوچستان میں اس کے ٹھکانوں کے لیے سہولت فراہم کرنا چاہتی تھی

SHARE

LEAVE A REPLY