لاہور بم دھماکے میں ملوث سہولت کار انورالحق کے دو بھائی گرفتار

0
266

سی ٹی ڈی نے سہولت کار انوارالحق کو کڑے حفاظتی پہرے میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا اور عدالت کو بتایا کہ ملزم لاہور میں چیئرنگ کراس پر خود کش حملہ آور کا سہولت کار ہے۔

باجوڑ ایجنسی کی تحصیل ماموند میں سکیورٹی فورسز نے کارروائی کرتے ہوئے لاہور بم دھماکے میں ملوث سہولت کار انوارالحق کے دو بھائیوں خلیل اللہ اور حمید اللہ کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے چیئرنگ کراس پر خودکش حملہ آور کے سہولت کار انوارلحق کو تیس دنوں کے جسمانی ریمانڈ پر سی ٹی ڈی کے تحویل میں دے دیا ہے۔

سی ٹی ڈی نے سہولت کار انوارالحق کو کڑے حفاظتی پہرے میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا اور عدالت کو بتایا کہ ملزم لاہور میں چیئرنگ کراس پر خود کش حملہ آور کا سہولت کار ہے۔ عدالت کو بتایا گیا کہ ملزم سے تفتیش کے لیے اس کا جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔ عدالت نے تمام ریکارڈ کا جائزہ لینے کے بعد سہولت کار انوارالحق کا تیس دنوں کا جسمانی ریمانڈ دے دیا اور ہدایت کی کہ جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر ملزم کو دوبارہ عدالت میں پیش کیا جائے۔

وزیراعلی پنجاب شہباز شریف نے ایک پریس کانفرنس میں سہولت کار انوار الحق کی گرفتاری کا اعلان کیا اور سی ٹی ڈی نے گزشتہ روز انوارالحق کو میڈیا کے سامنے پیش کیا۔ قانون کے تحت سی ٹی ڈی کسی بھی ملزم کا نوے دنوں کیلیے ریمانڈ لے سکتی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY