عرب ممالک کے مطالبات غیر حقیقی ہیں، قطر وزارت خارجہ

0
207

قطر کی وزارت خارجہ نے عرب ممالک کی طرف سے تعلقات کی بحالی کے لیے پیش کردہ 13 نکاتی مطالبات کوغیر حقیقی قرار دیتے ہوئے ان پر جلد سرکاری موقف ظاہر کرنےکا اعلان کیا ہے۔
غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق قطری وزارت خارجہ کی جانب سے ایک بیان جاری کیا گیا ہے کہ کویت کے احترام اور علاقائی سلامتی کی خاطر ہم چار ملکوں کی طرف سے پیش کردہ مطالبات پرغور کر رہے ہیں۔ تاہم قطری حکومت ان مطالبات کو خلاف منطق سمجھتا ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر نے کویت کے ذریعے قطری حکومت تک اپنے مطالبات کی ایک فہرست پہنچائی تھی۔ اس فہرست میں قطر سے تیرہ مطالبات پیش کیے گئے تھے اور ان پر عمل درآمد کے لیے قطری حکومت کو دس دن کی مہلت دی گئی ہے۔ مطالبات پر عمل درآمد کی صورت میں دوحہ اور دوسرے خلیجی وعرب ملکوں کے درمیان پیدا ہونے والی کشیدگی ختم ہو جائے گی۔

قطر سے کئے گئے مطالبات میں ایران سے تعلقات میں کمی اور دوحہ اور تہران کے عرب ممالک کے خلاف ابلاغی پروپیگنڈہ مہم کو ختم کرنا شامل ہے۔

قطری حکومت کے محکمہ کمیونیکیشن کے سربراہ شیخ سیف بن احمد الثّانی نے جمعے کو روز اس سے متعلق اپنے رد عمل میں کہا کہ مطالبات کی فہرست نے اسی بات کی توثیق کی ہے جو قطر روز اوّل سے کہتا رہا ہے کہ غیر قانونی رکاوٹ کا دہشت گردی کے خلاف لڑائی سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ یہ قطر کی خود مختاری کو محدود کرنے اور ہماری خارجہ پالیسی کو روکنے کی بات ہے

SHARE

LEAVE A REPLY