سابق چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو ڈاکٹروں نے ڈسچارج کر دیا

0
181

پمز ہسپتال کے وائس چانسلر جاوید اکرم کے مطابق سابق چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی کو ڈاکٹروں نے ڈسچارج کر دیا ہے، ان کی طبیعت بہتر ہو گئی تھی اور تمام ٹیسٹ بھی نارمل تھے۔

ذرائع کے مطابق، ظفر حجازی کو ڈاکٹروں نے انجیو پلاسٹی کرانے کا مشورہ دیا تھا مگر انھوں نے انجیو پلاسٹی کرانے سے انکار کر دیا۔ ہسپتال سے ڈسچارج ہونے پر ایف آئی اے کی ٹیم ظفر حجازی کو اپنے ساتھ ایف آئی اے کے دفتر لے گئی ہے جہاں دو رکنی ٹیم ان سے مزید تفتیش کرے گی۔ ظفر حجازی ریکارڈ ٹیمپرنگ کیس میں جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کی تحویل میں ہیں۔

دریں اثناء، وزارت خزانہ نے ظفر حجازی کی معطلی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے جس میں کہا گیا کہ ظفر حجازی کے خلاف ریکارڈ ٹیمپرنگ کا کیس ہے جس کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

تحقیقات مکمل ہونے اور کیس کا فیصلہ آنے تک ظفر حجازی کو چیئرمین سکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کے عہدے سے معطل کر دیا گیا ہے اور ان کی جگہ ظفر عبداللہ کو قائم مقام چیئرمین ایس ای سی پی مقرر کر دیا گیا ہے جو ایس ای سی پی میں کمشنر کے طور پر کام کر رہے تھے۔

SHARE

LEAVE A REPLY