حزب اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یار نے کہا ہے کہ افغانستان میں اسلامی حکومت بننے سے روکنے کے لئے امریکا اور روس نے مل کر کابل پر جنگ مسلط کی ۔
الجزیرہ کو انٹرویو میں گلبدین حکمت یار کا کہنا تھا کہ افغانستان نئی جنگ کا نہیں پرانی جنگ کا ہی شکار ہے، افغانستان کی جنگ سویت یونین نے نیٹو فورسز کے لیے بطور میراث چھوڑی۔
ان کا کہناتھاکہ نیٹو افغانستان میں انہی قوتوں کی حمایت کر رہا ہے، جن کو سویت یونین سپورٹ کرتا تھا۔
گلبدین حکمت یار نے کہا کہ افغانستان سے متعلق واشنگٹن اور ماسکو کا موقف یکساں رہا ہے، ماسکو 2001ء سے 2014ء تک امریکا اتحادی نیٹو فورسز کی مدد کرتا رہا۔
انہوں نے کہا کہ یوکرین تنازع پر 2014 کے بعد امریکا اور روس کے اختلافات ہوئے، روس طالبان کو سپورٹ کرتا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY