کوئٹہ کے علاقے سنجدی میں کوئلے کی کان بیٹھنے سے وہاں کام کرنے والے 2کان کن جاں بحق ہوگئے ، جبکہ دیگر کو نکالنے کی کوششیں جاری ہیں۔

چیف مائینز انسپکٹرافتخاراحمد کا کہنا ہے کہ کان میں جاں بحق ہونے والے دونوں کان کنوں کی لاشوں کو باہر نکال لیا گیا ہے جبکہ پھنسے ہوئے مزید کان کنوں کو باہر نکالنے کے لیے ریسکیو آپریشن جاری ہے۔

افتخاراحمد نے امید ظاہر کی کہ کچھ دیر میں کان میں پھنسے مزید کان کنوں کو ریسکیو کر لیا جائے گا۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ بھی کوئٹہ کے دو مختلف علاقوں مارواڑ اور اسپین کاریز میں کوئلے کی کان بیٹھنے کے واقعات پیش آئے تھے۔

دونوں حادثات میں مجموعی طور پر 18 مزدور جاں بحق ہوئے جن میں سے بیشتر کا تعلق سوات کے علاقے شانگلہ سے تھا جن کی میتیں بعدازاں آبائی علاقے بھیجی گئیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY