چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے نگراں وزیر اعظم جسٹس ناصرالملک کو خط لکھ دیا ہے۔ عمران خان نے خط میں گورنر کے پی کے، وفاق، پنجاب اور سندھ کی بیوروکریسی کو ہٹانے کا مطالبہ کیا ہے۔

نگراں وزیراعظم جسٹس ناصر الملک کو لکھے گئے خط میں عمران خان نے خیبرپختونخواہ کے گورنر کو فوری طور پر منصب سے ہٹانے کے علاوہ (ن) لیگ اور پیپلزپارٹی کی جانب سے لگائی گئی وفاقی و صوبائی بیوروکریسی بھی بدلنے کا مطالبہ کیا ہے۔

عمران خان نے خط میں موقف اختیار کیا ہے کہ گورنر خیبرپختونخواہ (ن) لیگ کے سیکریٹری جنرل رہے۔ وہ ابھی فاٹا کے حوالے مالی اختیارات اپنے پاس رکھے ہوئے ہیں۔ وہ خصوصاً فاٹا میں جانبدارانہ کردار کے حامل ہیں۔عمران خان نے موقف اختیار کیا کہ اسی طرح وفاق میں (ن) لیگ کی جانب سے مقرر کردہ بیوروکریسی تاحال تبدیل نہیں کی گئی۔ بیوروکریسی میں یہ جانبدار عناصر انتخابات کی شفافیت کیلئے بڑا خطرہ ہیں۔ سندھ اور پنجاب میں پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ کی جانب سے لگائی گئی بیوروکریسی انتخابات کے ماحول کو خراب کررہی ہے۔عمران خان نے مزید کہا کہ نگراں حکومتیں انتخابات کے انظانات کے حوالے سے شدید سست روی کا شکار ہیں۔ عام انتخابات پر شکوک و شبہات کے سائے ہمیں کسی طور گوارہ نہیں۔ نگراں وزیر اعظم فوری مداخلت کریں اور انتخابات کے انعقاد کی راہ میں حائل نقائص دور کریں

SHARE

LEAVE A REPLY