متحدہ قومی موومنٹ سندھ اور وفاق میں ایک بار پھر ڈیمانڈ میں آگئی ہے ،مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف نے ایم کیوایم رہنمائوں سے ملنے کی کوششیں تیز کردی ہیں۔

ایک طرف تحریک انصاف نے بھی ایم کیو ایم سے رابطوں کے لئے اپنی اسپیڈ بڑھالی ہے ،عمران خان نے جہانگیر خان ترین کو فوری طور پر کراچی جاکر خالد مقبول صدیقی سے ملاقات کی ہدایت کی ہے ۔

دوسری طرف سابق گورنر سندھ اور ن لیگی رہنما محمد زبیر ایم کیو ایم رہنمائوں سے ملاقات کےلئے بہادر آباد میں قائم مرکز پہنچے اور فیصل سبزواری کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو بھی کی۔

ذرائع کے مطابق محمد زبیر سے ہونے والی ملاقات میں پارٹی کے سربراہ خالد مقبول صدیقی ،فاروق ستار اور فیصل سبزواری نے شرکت کی ،ن لیگی رہنما نے ایم کیو ایم کی قیادت کو ن لیگی قیادت کا پیغام بھی پہنچایا ۔

محمد زبیر نے میڈیا کو بتایاکہ ملاقات میں الیکشن اور اس کے بعد کی صورتحال پر بات چیت ہوئی۔فیصل سبزواری نے کہا کہ ملاقات میں ن لیگ اور ایم کیو ایم کے درمیان رابطے برقرار رکھنے پر اتفاق ہوا ہے ۔

سابق گورنر سندھ نے کہا کہ ہم چاہتےہیں ایم کیوایم تحریک انصاف کےساتھ نہ بیٹھے جو چوری کےمینڈیٹ سےحکومت بنانےجارہی ہے۔

محمد زبیر نے یہ بھی کہا کہ ن لیگ کی طرح ایم کیو ایم کو بھی انتخابی نتائج پر تشویش ہے جو فارم 45 الیکشن والے دن یعنی 25 جولائی کو پولنگ ایجنٹ کو دینا تھا وہ ایک ہفتے بعد الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر آئے گا ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم تو چاہیں گے کہ ایم کیوایم ہمارے ساتھ بیٹھے،لیاری ایکسپریس وے ہم نے مکمل کیا ،گرین لائن کے 2 مراحل وفاق نے مکمل کیے۔

کراچی میں ہونے والے آپریشن کے حوالے سے محمد زبیر نے کہا کہ آپریشن دہشت گردوں کے خلاف تھا،اس کا ہدف ایم کیو ایم نہیں تھی ،انہوں نے تو آپریشن کےد وران بھرپور تعاون کیا ۔

فیصل سبزواری نے کہا کہ اےپی سی سےایک دن پہلےایم کیوایم نےچیف الیکشن کمشنر سے استعفےکامطالبہ کیاکیونکہ یہ ملکی تاریخ کا پہلا الیکشن ہے جس میں الیکشن کمیشن نے دھاندلی کی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ فاروق ستار نے اے پی سی میں ہمارا موقف پیش کیاہم جن نشستوں پر صرف چند سو ووٹ سے ہارے ہیں ،ان حلقوں پر ووٹوں کی گنتی نہیں کرائی جارہی ہے۔

ایم کیو ایم رہنما نے مزید کہا کہ فاروق ستار بھائی کو انہوں نے ہرایا ہے جنہیں ان کی جماعت کے لوگوں نے ووٹ نہیں دئیے،آرٹی ایس سسٹم کا بیٹھنا الیکشن کمیشن کی ناکامی ہے،پولنگ ایجنٹس کےسامنے گنتی نہیں کی گئی۔

ان کا کہنا تھاکہ ایم کیوایم نےانتخابی نتائج مستردکیےہیں ، جہانگیرترین جوبات کریں گےاس پررابطہ کمیٹی میں فیصلہ ہوگا، جنرل ورکرز اجلاس میں آئندہ کےاحتجاج کالائحہ عمل ترتیب دیں گے۔

SHARE

LEAVE A REPLY