راولپنڈی کا کمیٹی چوک میدان جنگ بن گیا

0
219

راولپنڈی:راولپنڈی کا کمیٹی چوک میدان جنگ بن گیا۔ پولیس نے عوامی مسلم لیگ اور پاکستان تحریک انصاف کے کارکنوں کوہٹانا شروع کردیا۔ پولیس کی جانب سے شیلنگ اور لاٹھی چارج کے جواب میں کارکنوں نے پتھراؤ بھی کیا۔
پولیس نے جلسے میں شرکت کیلئے کارکنوں کوہٹاناشروع کردیا۔ پولیس کی جانب سے کارکنوں پرلاٹھی چارج اورشیلنگ بھی کی جا رہی ہے۔
کارکنوں کی جانب سے شیلنگ اور لاٹھی چارج کے جواب میں پولیس پر پتھراؤ کیا گیا جس سے دو پولیس اہلکار معمولی زخمی بھی ہوئے۔ شیلنگ کے بعد کارکن منتشر ہوئے لیکن جیسے ہی پولیس تھوڑا سا پیچھے ہٹی، کارکنوں نے پولیس پر پتھراؤ شروع کردیا۔ پولیس احتجاج کرنے والوں کو گرفتار کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔
کشیدہ صورتحال کے باعث ڈی سی او راولپنڈی خود بھی موقع پر موجود ہیں۔
واضح رہے کہ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے آج لال حویلی کے سامنے عوامی طاقت کا مظاہرہ کرنے کا اعلان کر رکھا ہےمگرپنجاب حکومت نے ان کی گرفتاری کی ہدایت اورجلسہ ہر صورت روکنے کی ہدایت کررکھی ہے۔ اسی مقصد کے لیے رات گئے پولیس نے لال حویلی سے منسلک راستوں کو درجنوں کنٹینر لگا کر سیل کر دیاجبکہ لال حویلی کے صدر دروازے کو بالکل بند کر دیا گیا ہے۔ پولیس نے جلسہ کے اسٹیج اور ساؤنڈ سسٹم کو بھی اپنے قبضے میں لے لیاہے۔
دوسری جانب شیخ رشید کے ڈرائیور،سیکیورٹی گارڈ کو گرفتار کر لیا گیا ہے جبکہ شیخ رشید پولیس کو چکمہ دے کر نکلنے میں کامیاب ہوگئے اور انہوں نے ہر صورت لال حویلی پہنچنے کا پیغام دیا ہے

SHARE

LEAVE A REPLY