سابق وفاقی وزیر اور پیپلز پارٹی کے رہنما ڈاکٹر عاصم نے کرپشن کے خلاف وزیراعظم عمران خان کے اقدامات کو درست قرار دے دیا ہے ۔

میڈیا سے گفتگو میں ڈاکٹر عاصم نے کہا کہ شرجیل میمن کے اسپتال کے کمرے سے جو کچھ برآمد ہوااس کی ذمہ داری جیل پولیس کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جیل انتظامیہ نےدوبارہ بھی شرجیل میمن کےعلاج کی درخواست کی،جو مسترد کردی گئی،وہ شرجیل میمن کے ڈاکٹر نہیں ، ان کاکیاعلاج ہورہاتھانہیں بتاسکتے ۔

ڈاکٹر عاصم نے کہا کہ میرے خلاف مقدمات انتقامی کارروائی ہیں ،اس پر نظر ثانی کی جائے ۔

احتساب عدالت کراچی ميں ڈاکٹر عاصم کے خلاف 17 ارب روپے کرپشن ريفرنس کی سماعت ہوئی جو 22 ستمبر تک ملتوی کردی گئی۔

ڈاکٹر عاصم نے بطور چیئرمین صوبائی ہائیر ایجوکیشن کمیشن کی حیثیت سے ملنے والے تمام مراعات ڈیم فنڈز میں دینے کا اعلان کیا

SHARE

LEAVE A REPLY