اسلام آباد سے کراچی کے ہوائی سفر کے دوران پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما اسد عمر کی طبیعت اچانک خراب ہوگئی جس کے باعث انھیں علاج کیلئے کراچی کے نجی ہسپتال منتقل کیا گیا۔

ڈان نیوز کے مطابق اسد عمر پی کے 319 کے ذریعے اسلام آباد سے کراچی آرہے تھے کہ دوران سفر اور کراچی ایئرپورٹ پر لینڈنگ سے قبل ان کی طبیعت اچانک خراب ہوگئی۔

طیارے کی لینڈنگ کے فوری بعد پی ٹی آئی کے رہنما کو نجی ہسپتال منتقل کیا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اسد عمر کی طبیعت کے حوالے سے پی ٹی آئی ترجمان خرم شیر زمان کا کہنا تھا کہ نجی ہسپتال میں اب ان کے رہنما کی طبیعت بتدریج بہتر ہورہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دوران سفر اسد عمر کے سر میں شدید درد ہوا اور ان کا بلڈ پریشر بھی ہائی تھا، جس کی وجہ سے ان کی طبیعت بگڑ گئی۔

خرم شیر زمان کے مطابق اسد عمرکی طبیعت لینڈنگ کے دوران اچانک خراب ہوگئی تھی تاہم طیارے کی لینڈنگ کے بعد انھیں کراچی کے نجی ہسپتال منتقل کیا گیا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ اسد عمر کی طبیعت اب بہتر ہے۔

خیال رہے کہ اسد عمر کی زیر صدارت ہونے والے اسلام آباد میں گذشتہ روز قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کے اجلاس میں چیئرمین کمیٹی اسد عمر اور چیئرمین نجکاری کمیشن محمد زبیر میں تلخ کلامی دیکھنے میں آئی تھی۔

تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی اسد عمر مسلم لیگ (ن) کے رہنما محمد زبیر کے بھائی ہیں۔

اسٹیل ملز کے معاملے پر اسد عمر اپنے بھائی محمد زبیر پر ہی برس پڑے، نجکاری کمیشن کے سربراہ کو کمیٹی کے چیئرمین نے کہا کہ اگر آپ بات نہیں سن سکتے تو اجلاس چھوڑ کر چلے جائیں۔

اسد عمر کا مزید کہنا تھا کہ آپ کو کمیٹی کی بات سننا پڑے گی، بریفنگ میں جھوٹ بولا گیا ہے اور جھوٹ بولنے پر تحریک استحقاق بھی لائی جاسکتی ہے۔

اسد عمر کا اجلاس میں کہنا تھا کہ اسٹیل ملز 2008 تک منافع میں جارہی تھی جبکہ اس کا منافع 19 ارب 40 کروڑ روپے تک پہنچ گیا تھا۔

اسٹیل ملز کو خسارے سے نکالنے کے لیے اسد عمر نے تجویز دی کہ حسین نواز کو اسٹیل ملز کا چیئرمین لگایا جائے کیونکہ وہ اسٹیل ملز کا کاروبار بہتر جانتے ہیں۔

جس پر محمد زبیر کا کہنا تھا کہ آپ سیاسی بات کررہے ہیں۔

اسد عمر نے وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ وہ حسین نواز کی تعیناتی کی تجویز ان کے تجربے کی بنیاد پر دے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ حکومت نے زبوں حالی کے شکار پاکستان اسٹیل ملز کو لیز پر دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

کابینہ کی نجکاری کمیٹی سے اسٹیل ملز کو لیز پر دینے کی منظوری کے لیے 18 جنوری کو سفارشات پیش کی جائیں گی۔

SHARE

LEAVE A REPLY