فوجی عدالتوں میں توسیع کے معاملے پر سپیکر ایاز صادق کی زیرصدارت پارلیمانی رہنماؤں کی چوتھی بیٹھک بھی بے نتیجہ ختم ہو گئی۔ اہم حکومتی حلیف مولانا فضل الرحمان اور محمود خان اچکزئی کے ساتھ ساتھ وزیر داخلہ بھی اجلاس سے غائب رہے۔

ڈی جی ملٹری آپریشنز نے پارلیمانی رہنماؤں کو فوجی عدالتوں کی دو سالہ کارکردگی پر بر یفنگ دی۔ سیاسی رہنماؤں نے ان عدالتوں کی کارکردگی پر اظہار اطمینان کیا۔ اجلاس کے بعد کے سپیکر ایاز صادق نے کہا کہ امید ہے آئندہ ایک دو اجلاسوں میں مکمل اتفاق رائے پیدا ہو جائے گا۔ شاہ محمود قریشی کہتے ہیں حکومت نیشنل ایکشن پلان میں اصلاحات لانے میں ناکام رہی، حتمی فیصلے کے لئے اے پی سی بلائی جائے۔

شیخ رشید نے کہا کہ مثبت پیشرفت ہوئی اور معاملات درست سمت میں آگے بڑھے۔ اعجاز جاکھرانی کہتے ہیں فیصلہ پیپلز پارٹی کی قیادت کرے گی۔ پارلیمانی رہنماؤں نے مزید کہا کہ ملک سے دہشتگردی کا خاتمہ چاہتے ہیں لیکن کوئی بھی فیصلہ قومی مفاد کو مدنظر رکھ کر ہی کیا جائے گا۔

SHARE

LEAVE A REPLY