اسلام آباد ہائی کورٹ نے مقدس ہستیوں کی شان میں گستاخی سے متعلق درخواست پر جواب کے لیے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا۔

ہائی کورٹ میں مقدس ہستیوں کی شان میں گستاخی سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔

عدالت کے حکم پر آئی جی اسلام آباد پولیس اور چیئرمین پی ٹی اے عدالت میں پیش ہوئے۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے سیکریٹری داخلہ کے عدالت نہ آنے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حساس نوعیت کے اس معاملے پر انتظامیہ کی خاموشی شرمناک ہے، مقدس ہستیوں کی شان میں گستاخی سے پورے ملک میں انتشار پھیل سکتا ہے اور معاملے پر فوری کارروائی نہ ہوئی تو پیروکاروں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ روز محشر ہماری شفاعت کرنے والی ہستی کی کردار کشی کی جا رہی ہے، یہ معاملہ بیورکریسی پر نہیں چھوڑیں گے جبکہ معاملے میں ملوث عناصر اور جو تماشہ دیکھتے رہے دونوں کے خلاف کارروائی ہوگی۔

SHARE

LEAVE A REPLY